ناسا کا نئی کہکشاں دریافت کرنے کا دعویٰ

ناسا کا نئی کہکشاں دریافت کرنے کا دعویٰ
 ناسا کا نئی کہکشاں دریافت کرنے کا دعویٰ

  

واشنگٹن (مانیٹرنگ ڈیسک) خلائی تحقیق کے امریکی ادارے ناسا نے این جی سی 1566نامی ایک نئی کہکشاں دریافت کرنے کا دعویٰ کیا ہے جو زمین سے 40 کروڑوں نوری سال کے فاسلے پر واقع ہے ۔ ناسا کے مطابق کہکشاں کی تصویر خلائی دوربین ہبل کی مدد سے لی گئی ہے۔ سائنسدانوں کے مطابق اس کہکشاں میں ستارے بکھرے بکھرے سے نظر آرہے ہیں اس لئے اس کی شکل کو کسی خاص چیز یا جسم سے مشابہ قرار دینا مشکل ہے۔ سائنسدانوں کا کہنا ہے کہ اس طرح کی کہکشاﺅں کا مرکز کافی روشن، متحرک اور طاقتور ہوتا ہے جس سے بہت بڑی مقدار میں تابکاری مادے خارج ہوتے ہی ں اور یہ ممکنہ طور پر بلیک ہولز کا منبع بھی ہوسکتا ہے۔ ناسا سائنسدانوں کا کہنا ہے کہ یہ اب تک دریافت کی جانے والی دوسری بڑی کہکشاں ہے۔ اس غیر معمولی کہکشاں کو مختلف کہکشاﺅں پر مشتمل ڈوریڈو گروپ کی سب سے اہم اور نمایاں کہکشاں قرار دیا جارہا ہے۔

مزید :

سائنس اور ٹیکنالوجی -