نیٹو نے یورپی عوام کے اربوں ڈالر گما دیے

نیٹو نے یورپی عوام کے اربوں ڈالر گما دیے
نیٹو نے یورپی عوام کے اربوں ڈالر گما دیے

  

ایمسٹرڈیم (مانیٹرنگ ڈیسک) امریکہ کے اشارے پر دنیا کے متعدد ممالک پر چڑھ دوڑنے والی اتحادی فوج نیٹو (NATO) نے جہاں کبھی یہ حساب نہیں رکھا کہ اس نے کتنے معصوم لوگوں کو موت کے گھاٹ اتاردیا ہے وہیں پچھلے چالیس سال سے کسی کو یہ بھی پتا نہیں لگنے دیا کہ اس کو ملنے والے اربوں ڈالر کے فنڈ کدھر گئے ان کا کیا استعمال ہوا اور کس نے یہ ڈالروں کے ڈھیرے غائب کئے۔ نیدر لینڈ کی حکومت نے نیٹو کی مالی بے ضابطگیوں سے گھبراکر ایک آڈٹ شروع کیا تو پتا چلا کہ مغربی ممالک کی حکومتیں پچھلے 40سال میں اپنے عوام کی خون پسینے کی کمائی کے اربوں ڈالر اس خون آشام فوج پر لٹاچکی ہیں لیکن ان حکومتوں میں سے کسی کو بھی نیٹو نے اس قابل نہیں سمجھا کہ اسے اپنے اخراجات کا کوئی بھی حساب دے۔ نیدر لینڈ کے آڈٹ حکام کا کہنا ہے کہ نیٹو کو تین قسم کے فنڈ ملتے ہیں جن میں سے پہلے میں تو اس کے تمام 28 ممبر حصہ ڈالتے ہیں اور اس کے بارے میں معلومات موجود ہیں۔ لیکن باقی دو فنڈ جنہیں انٹرنیشنل مشن فنڈ اور سپیشل فنڈ کہا جاتا ہے ان کے بارے میں تمام تر تحقیق کے باوجود کچھ پتا نہیں چل سکا کہ یہ فنڈ کہاں سے آتے ہیں اور کہاں جاتے ہیں۔

مزید : بین الاقوامی