برما میں مسلمانوں سے بنیادی انسانی حقوق چھین لیے گئے، امانت علی تارڑ

برما میں مسلمانوں سے بنیادی انسانی حقوق چھین لیے گئے، امانت علی تارڑ
 برما میں مسلمانوں سے بنیادی انسانی حقوق چھین لیے گئے، امانت علی تارڑ

  

جوہانسبرگ( بیورورپورٹ ) سینئر نائب صدر پاکستان جنوبی افریقہ ایسوسی ایشن امانت علی تارڑ نے برما میں مسلمانوں کے قتل عام پر اقوام متحدہ سمیت انسانی حقوق کے علمبرداروں کی خاموشی کو انسانیت کے منہ پر طمانچہ قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ اقوام متحدہ نے روہنگیا مسلمانوں پربرما کی بدھ حکومت کے انسانیت سوز مظالم پر آنکھیں بند کر رکھی ہیں وہ یہودی اور امریکی ایجنڈے کے مفادات کا تحفظ کر رہا ہے ۔ان خیالات کا اظہار امانت علی تارڑ نے روزنامہ پاکستان کے بیوروچیف ندیم شبیر سے گفتگو کرتے ہوئے کیا۔ انہوں نے کہا کہ برما،کشمیر اور فلسطین میں مسلمانوں پر ہونے والے بد ترین مظالم پر اقوام متحدہ کی بے حسی اور خاموشی پر تاریخ کبھی اسے معاف نہیں کرے گی، اقوام متحدہ انسانی حقوق کے تحفظ میں مکمل طور پر ناکام ہو چکا ہے ۔انہوں نے کہا کہ برما میں مسلمانوں سے ان کے بنیادی انسانی حقوق چھین لیے گئے ہیں ان کو بھیڑ بکریوں کی طرح ذبح کیا جا رہا ہے، مسلمانوں کے قتل عام پر مسلم ممالک کے حکمران اپنے اقتدار کی بقاء ،عیش و عشرت کی زندگی گزارنے میں مصروف ہیں انہیں خواب غفلت سے جاگ کر روہنگیا مسلمانوں کے حقوق کی آواز بلند کرنی چاہیے ورنہ تاریخ انہیں کبھی معاف نہیں کرے گی۔

مزید : عالمی منظر