موجود بجٹ مزدوردشمن ، بے روزگاری بڑھے گی: عطیہ سلیم

موجود بجٹ مزدوردشمن ، بے روزگاری بڑھے گی: عطیہ سلیم

لاہور( خبرنگار) پاکستان لیبر فیڈریشن کی چیئرپرسن عطیہ سلیم نے کہا ہے کہ موجودہ بجٹ کے خلاف ملک کی تمام مزدور تنظیموں کے اجلاس میں موجودہ بجٹ کو مزدور دشمن، ملازمین کی تنخواہوں اور پنشن میں 5 سے 7 فیصد اضافہ کو اونٹ کے منہ میں زیرہ قرار دیا گیا ہے۔ اشیاء خوردونوش کی قیمتوں میں اضافہ، پٹرول کی قیمتوں میں اضافہ اور آئی ایم ایف کی ہدایت پر عوام پر 500 ارب کے ٹیکس کا بوجھ ڈال دیا گیا ہے۔ بے روزگاری اور غربت سے تنگ عوام خودکشیاں کر رہے ہیں۔ صدر اور وزیر اعظم کے لئے کروڑوں روپے مختص کیے گئے ہیں۔ ملک میں بجلی اور گیس کی لوڈشیڈنگ کی وجہ سے سرمایہ دار اپنی فیکٹریاں بیرون ممالک میں لگا رہے ہیں۔ حاجی محمد سعید آرائیں نے کہا کہ نوجوانوں کے لئے تمام قومی اداروں میں بھرتی کا اعلان کیا جائے۔ نوجوانوں کوفنی تربیت فراہم کی جائے۔ ملک کا لوٹا ہوا پیسہ بیرون ممالک میں ہے اسے واپس لایا جائے۔ سامان تعیش اور بڑی گاڑیوں کی درآمد پر فی الفور پابندی لگائی جائے۔ تمام ملازمین کی تنخواہوں میں مہنگائی کے تناسب سے اضافہ کیا جائے۔

ملازمین کو ترقی کے مواقع فراہم کیے جائیں۔ کنٹریکٹ اور عارضی بھرتی کی بجائے تمام ملازمین کو مستقل بنیادوں پر بھرتی کیاجائے۔ہیلتھ ایمپلائز کا سروس سٹرکچر فی الفور منظور کیا جائے۔ انہوں نے کہا کہ رمضان کا مقصد مہینہ شروع ہونے سے قبل ہی گوشت اور اشیاء خوردونوش کی قیمتوں میں بے پناہ اضافہ کر دیا گیا ہے حالانکہ ان کی قیمتوں میں کمی کرنا چاہیے تھا۔ انہوں نے کہا کہ لندن میں جہاں پر مسلمانوں کی حکومت نہیں ہے تمام اشیاء خوردونوش 50 فیصد سستی کر دی گئی ہیں۔ انہوں نے کہا کہ وزیراعظم پیکج سکیم کے تحت ملازمت کرنے والوں کو فی الفور مستقل کیا جائے ۔ مقررین نے کہاکہ تمام منافع بخش قومی اداروں کی نجکاری ختم کرنے اور ملازمین کو جبری برطرف کرنے کا سلسلہ بند کیا جائے انہوں نے کہا کہ تمام قومی اداروں میں بھرتی پر پابندی ختم کی جائے اور ملازمین کے بچوں کو 50 فیصد ملازمتیں دی جائیں۔

مزید : میٹروپولیٹن 4