پنجاب حکومت ملازمین کی تنخواہوں میں 30فیصد اضافہ کرے،ایپکا

پنجاب حکومت ملازمین کی تنخواہوں میں 30فیصد اضافہ کرے،ایپکا

لاہور( خبرنگار) پنجاب بھر کے سرکاری ملازمین نے حکومت سے مطالبہ کیا ہے کہ پنجاب حکومت صوبائی بجٹ میں وفاقی حکومت کی پیروی نہ کرے اور بجٹ میں سرکاری ملازمین کی تنخواہوں میں کم سے کم 30 فیصد اضافہ کرے۔ان خیالات کا اظہار حاجی محمد ارشاد چوہدری ،صوبائی صدر ایپکا نے کیا ہے۔ اس سے قبل ایپکا پنجاب کا ایک ہنگامی اجلاس اُنکی زیرصدارت محکمہ زراعت ، ڈیوس روڈ، لاہور میں منعقد ہوا جسمیں رانا ثناء اللہ خان صوبائی وزیر قانون پنجاب کی جانب سے سرکاری ملازمین کی تنخواہوں میں اضافہ کے حوالے سے میڈیا کے ساتھ اظہارِ خیال کرتے ہوئے کہا کہ ضروری نہیں کہ حکومت پنجاب سرکاری ملازمین کی تنخواہیں بڑھانے کے لئے وفاقی بجٹ کی پیروی کرے بلکہ اُنہوں نے عندیہ دیا کہ صوبائی بجٹ برائے مالی سال 2015-16 میں صوبہ پنجاب کے سرکاری ملازمین کی تنخواہوں میں خاطر خواہ اضافہ کیا جائے گا ۔ حاجی محمد ارشاد نے کہا کہ ہم اُمید کرتے ہیں کہ حکومت پنجاب سرکاری ملازمین کی حالت زار کو مدنظر رکھتے ہوئے تمام ایڈہاک ریلیف الاؤنسز کو اُنکی بنیادی تنخواہوں میں ضم کرکے کم از کم30فیصد اضافے کا اعلان کرے گی ۔صوبائی صدر ایپکانے کہا کہ رانا ثناء اللہ خان ایپکا رہنماؤں سے کئے گئے وعدے کی روشنی میں اُن کے مطالبات بجٹ 2013 ء میں دیگر صوبوں سے 5% فرق کا خاتمہ،صوبہ خیبر پختونخواہ کی طرز پر اپ گریڈیشن، گریڈایک تا سولہ تک تمام سرکاری ٹیکنیکل و نان ٹیکنیکل ملازمین کوبلا امتیاز ٹائم سکیل پروموشن کا اجراء، سپیشل ایجوکیشن 50% کی 2010 ء سے منظوری، محکمہ زکوۃ کے ملازمین کو ریگولر کرنا اور حکومتی پالیسی کے بر عکس اُن کی اجرت کا خاتمہکی منظوری ، 25% ا سسٹنٹ کی پوسٹوں کو S&GAD پنجاب کی طرز پر سپر نٹینڈیٹ کے طور پر اپ گریڈیشن کی منظوری کریں تاکہ غریب اور محروم محدود تنخواہ یافتہ طبقہ جو مہنگائی کی چکی میں بری طرح پس رہا ہے، کچھ نہ کچھ سکھ کا سانس لے سکیں جو کہ حکومت وقت کیلئے نیک دُعاؤں کا سبب بنے گا۔

ایپکا

مزید : صفحہ آخر