یکساں تعلیمی نظام رائج کرنے کیلئے دائر درخواست پر وفاقی و صوبائی حکومتوں کو نوٹس

یکساں تعلیمی نظام رائج کرنے کیلئے دائر درخواست پر وفاقی و صوبائی حکومتوں کو ...

لاہور (نامہ نگارخصوصی ) لاہور ہائیکورٹ کی جسٹس عائشہ اے ملک نے یکساں تعلیمی نظام رائج کرنے کے لئے دائر درخواست پر وفاقی و صوبائی حکومتوں کو نوٹس جاری کرتے ہوئے 4ہفتوں میں جواب طلب کر لیا۔درخواست گزار کے وکیل اے کے ڈوگر نے عدالت کو بتایا کہ آئین کے آرٹیکل 25( اے )کے تحت طالبعلمو ں کو مفت اوریکساں نظام تعلیم کی فراہمی ریاست کی ذمہ داری ہے۔حکومت اپنی ذمہ داری مکمل نہیں کر رہی جبکہ نامور نجی تعلیمی ادارے تعلیم کے نام پر کاروبار کر رہے ہیں۔انہوں نے کہا کہ ملک میں طبقاتی تعلیمی نظام رائج ہے جس سے امیر اور غریب کے درمیان طبقاتی تقسیم کی خلیج مزید وسیع ہو رہی ہے۔درخواست گزار کے مطابق ملکی آئین اور قوانین کے تحت تعلیم کو فروخت کر کے مالی فوائد حاصل نہیں کئے جا سکتے۔ عدالت نے سماعت کے بعد وفاقی وصوبائی حکومتوں کو نوٹس جاری کرتے ہوئے جواب طلب کر لیاہے۔

یکساں نظام

مزید : صفحہ آخر