’متحدہ عرب امارات ہم پر الزام لگا رہا ہے جبکہ یہ کام وہ ہم سے زیادہ خود کرتا ہے‘ قطر نے زوردار اعلان کر دیا، ایسی بات کہہ دی کہ نیا پنڈورا باکس کھل گیا، جان کر سعودی عرب متحدہ عرب امارات کے بارے میں بھی پریشان ہو جائیں گے

’متحدہ عرب امارات ہم پر الزام لگا رہا ہے جبکہ یہ کام وہ ہم سے زیادہ خود کرتا ...
’متحدہ عرب امارات ہم پر الزام لگا رہا ہے جبکہ یہ کام وہ ہم سے زیادہ خود کرتا ہے‘ قطر نے زوردار اعلان کر دیا، ایسی بات کہہ دی کہ نیا پنڈورا باکس کھل گیا، جان کر سعودی عرب متحدہ عرب امارات کے بارے میں بھی پریشان ہو جائیں گے

  

دوحہ(مانیٹرنگ ڈیسک) قطر کی طرف سے ایران کی حمایت کرنے پر عرب دنیا میں اٹھنے والا طوفان کسی طور کم ہونے میں نہیں آ رہا بلکہ ہر آئے دن کے ساتھ اس کی سنگینی میں اضافہ ہو رہا ہے اور فریقین کی طرف سے ایک دوسرے پر تابڑ توڑ زبانی حملے ہو رہے ہیں۔عالمی خبررساں ایجنسی کی رپورٹ کے مطابق گزشتہ روز متحدہ عرب امارات کے وزیرخارجہ انور گرگیش نے سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر قطر کو منافق قرار دیتے ہوئے کہا کہ ”قطر کی طرف سے دہشت گردوں کی حمایت کرنے کی وجہ سے پورا خطہ ہنگامہ خیزی اور تشدد سے دوچار ہے۔قطر شدت پسندی اور دہشت گردی کے ٹائیگر پر سواری کر رہا ہے، جس کی اس خطے اور پوری دنیا کو بھاری قیمت چکانی پڑ رہی ہے۔ سفارت کاری صرف اسی صورت میں آگے بڑھ سکے گی جب قطر کی طرف سے یقین دلایا جائے کہ وہ دہشت گردوں کی مدد روک دے گا۔“

انور گرگیش کے جواب میں روس کے دورے پر موجود قطری وزیرخارجہ شیخ محمد بن عبدالرحمن الثانی نے روسی ہم منصب سرگئی لیوروف سے ملاقات کے بعد آرٹی عربی کو انٹرویو دیتے ہوئے کہا کہ ”قطر پر الزام عائد کیا جا رہا ہے کہ اس کے ایران کے ساتھ خفیہ مراسم ہیں۔ حالانکہ ہمارے ایران کے ساتھ بالکل واضح، شفاف اور آزمودہ تعلقات ہیں۔ ہم پر الزامات لگانے والا متحدہ عرب امارات ایران کے ساتھ ہم سے زیادہ تجارت کرتا ہے۔“ شیخ محمد نے اس موقع پر مصر کی کالعدم تنظیم ’مسلم بھائی چارہ‘ اور فلسطین کی حماس کی خفیہ حمایت کرنے کی تردید کی۔ انہوں نے سعودی میڈیا کی اس خبر کی بھی تردید کی جس میں دعویٰ کیا گیا تھا کہ انہوں نے بغداد میں ایرانی تنظیم قدس فورس کے سربراہ سے ملاقات کی ہے۔ روس، ترکی، جرمنی اور امریکہ سمیت کئی ممالک مشرق وسطیٰ کی صورتحال پر تشویش کا اظہار کر چکے ہیں اور اسے جنگ کا پیش خیمہ بیان کر رہے ہیں۔

مزید : عرب دنیا