باغبانپورہ، تھانے میں زیرحراست ملزم نے چوتھی منزل سے چھلانگ لگا دی، ہسپتال میں داخل

باغبانپورہ، تھانے میں زیرحراست ملزم نے چوتھی منزل سے چھلانگ لگا دی، ہسپتال ...

لاہور(خبرنگار) انویسٹی گیشن پولیس باغبانپورہ کی زیر حراست ڈکیتی کے مقدمہ کے ملزم نے تھانے کی چوتھی منزل سے مبینہ طور پر چھلانگ لگا دی۔ ملزم کو تشویشناک حالت میں سروسز ہسپتال میں داخل کروا دیا گیا ہے۔ پولیس افسران نے انچارج انویسٹی گیشن کو بچاتے ہوئے ٹرینی اے ایس آئی امتیاز کو قربانی کا بکرا بنا دیا۔ بتایا گیا ہے کہ انویسٹی گیشن پولیس باغبانپورہ نے سجاد وغیرہ تین ملزموں کو ڈکیتی کے مقدمات میں ملوث ہونے پر گرفتار کر رکھا ہے۔ گزشتہ رات انچارج انویسٹی گیشن ساجد نذیر ، ٹرینی تھانیدار امتیاز احمد اور چار اہلکار تینوں ملزمان کی تفتیش کر رہے تھے ۔ اس دوران ملزم سجاد کو الٹا لٹکا کر چھترول کی جا رہی تھی کہ اس کی چیخ و پکار پر تھانے کے دیگر اہلکار بھی چوتھی منزل پر پہنچ گئے اور ملزم نے مبینہ طور بے ہوشی کی حالت میں کروٹ بدلی اور تھانے کی چوتھی منزل سے نیچے گر گیا جس کے باعث اس کی دونوں ٹانگیں اور بازو ٹوٹ گئے جبکہ جسم کے دیگر حصوں سمیت سر پر شدید چوٹیں آئیں۔ واقعہ کے بعد انچارج انویسٹی گیشن آگے پیچھے ہو گئے۔ اطلاع ملتے ہی ملزم کے لواحقین بھی تھانے میں پہنچ گئے اوراحتجاج شروع کر دیا۔ ملزم کو تشویشناک حالت میں سروسز ہسپتال میں منتقل کر دیا گیا ۔ واقعہ کا آئی جی پولیس اور سی سی پی او لاہور نے الگ الگ نوٹس لے لیا ہے ۔ پولیس افسران نے موقع پر پہنچ کر زیر تربیت تھانیدار امتیاز احمد اوردواہلکاروں کوتشدد میں ملوث ہونے پر ذمہ دار ٹھہراتے ہوئے معطل کردیا جبکہ انچارج انویسٹی گیشن کو بڑی مہارت سے بچا لیا گیا۔ اس حوالے سے ایس پی کینٹ انویسٹی گیشن ڈاکٹر انوش مسعود کا کہنا ہے کہ ملزم نے چوتھی منزل سے چھلانگ لگائی جس سے اس کی ٹانگیں اور بازو ٹوٹ گئے جبکہ ملزم کے بھائی اور بیوی کا کہنا ہے کہ پولیس نے اس پر تشدد کیا اور تشدد کے دوران بے ہوشی کی حالت میں نیچے گرا ہے۔

مزید : علاقائی