عام انتخابات: ملتان سمیت جنوبی پنجاب میں کاغذات نامزدگی جمع کرانیکا عمل جاری

عام انتخابات: ملتان سمیت جنوبی پنجاب میں کاغذات نامزدگی جمع کرانیکا عمل جاری

ملتان‘ شجاع آباد‘ جلالپور پیروالا‘ خانیوال‘ عبدالحکیم‘ کبیروالا‘ بارہ میل‘ وہاڑی‘ میلسی‘ مظفرگڑھ‘ چوک سرورس شہید‘ جتوئی‘ جام پور (بقیہ نمبر38صفحہ7پر )

گوگڑاں‘ بہاولپور حاصل پور‘ رحیم یار خان‘ صادق آباد (خبر نگار خصوصی‘ نمائندگان)ملک بھر کی طرح ملتان سمیت جنوبی پنجاب میں بھی قومی عام انتخابات کے لئے اتوارکی تعطیل کے باوجود امیدواروں کی بڑی تعدادکی جانب سے کاغذات نامزدگی جمع کرائے گئے۔اس موقع پرامیدواراپنے حامیوں کے ہمراہ میں ضلع کچہری پہنچے جہاں حامی افرادنے نعرے بازی کی اور آج کاغذات نامزدگی وصول اورجمع کرانے کی آخری تاریخ ہے جس کے بعدکاغذات نامزدگی کی جانچ پڑتال کی جائیگا۔ جبکہ کئی اہم امیدوارسامنے آگئے ہیں جنہوں نے گزشتہ روزکاغذات نامزدگی جمع کرائے ہیں۔اس سلسلے میں گزشتہ این اے 156 سے آل پاکستان مسلم لیگ کے امیدوار سلطان محمود ملک ،پاکستان پیپلز پارٹی کے رہنما ملک ظفر احمد راں صوبائی حلقہ 218 ،تحریک لببیک کے محمد ایوب مغل این اے 155 ،پیپلز پارٹی کے رہنما خضر حیات سندھو نے صوبائی حلقہ 219 ،پاک سرزمین پارٹی سے کرامت علی شیخ نے قومی اسمبلی کا حلقہ 155 ،پیپلز پارٹی کی رہنما کلثوم ناز ،پی پی 214 سے ن لیگ کے امیدوا شیخ اطہر ،این اے 154سے پاکیستان سرائیکی پارٹی کے امیدوار طلال زوہیب ،پی پی 218 سے ن لیگ کے امیدوا چودھری عبدلشکور گجر ،این اے156 سے سید تنو یرالحسن گیلا نی اور سے ن لیگ کے امیدوا رانا شاہد الحسن ،پی پی 217 ا رانا شاہد الحسن اورا نوید بھٹی ،پی پی 215 سے ن لیگی امیدوار عمران لیاقت ،پی پی 211 سے ن لیگی امیدوار ملک قادر نواز سانگی نے کاغذات نامزدگی جمع کروا دیئے۔ دریں اثناء ضلع کچہری میں کاغذات نامزدگی جمع کرانے کے موقع پرلیگی امیدواروں شیخ اطہر ممتاز، رانا شاہد الحسن، نوید بھٹی، شیخ عمران لیاقت نے صحافیوں سے گفتگو کرتے ہو ئے کہا کہ (ن) لیگ آج بھی ملک کی سب سے بڑی جماعت ہے جو وفاق کی علامت ہے عام انتخابات میں ایک بار پھر (ن) لیگ بھاری مینڈیٹ سے کامیاب ہو گی روٹی، کپڑا ، مکان اور نئے پاکستان کا نعرہ لگانے والوں کی ضمانتیں ضبط ہوجائیں گی۔ پاکستان تحریک انصاف کے سینئر سیاستدان قادر نواز سانگی نے کہا ہے کہ پی ٹی آئی کو عوام نے عام انتخابات میں اقتدار میں آنے کا موقع دیا تو پاکستان کو ترقی یافتہ ممالک کی صفوں میں لاکھڑا کریں گے بجلی کی لوڈشیڈنگ مکمل طور پر ختم، بے روزگاری کا خاتمہ، جمہوریت کے استحکام اور مہنگائی کے خاتمے کے لئے اولین کردار ادا کریں گے (ن) لیگ اور پیپلز پارٹی نے ہمیشہ اقتدار کی سیاست کی یہی وجہ ہے کہ آج عوام مسائل در مسائل کا شکار ہیں ان خیالات کا اظہار انہوں نے ضلع کچہری میں یونین کونسلوں کے چیئرمینوں، وائس چیئرمینوں، کونسلرز، کارکنوں کے ہمراہ ریلی کی صورت میں کچہری پہنچنے پر ریٹرنگ افسر کو پی پی حلقہ 211کے لئے کاغذات نامزدگی جمع کرانے کے موقع پر میڈیا سے بات چیت کرتے ہو ئے کیا اس موقع پر لیاقت میتلا، جاوید مہوٹہ، مصطفی آہیر، ملک عثمان، معید رضا،نجف ،رانا خالدودیگر بھی موجود تھے ۔شجاع آبادسے نمائندہ خصوصی کے مطابق این اے 158سے سید جاوید علی شاہ ، پی پی 220رانا طاہر شبیر ، پی پی 221سے رانا اعجاز احمد نون نے مسلم لیگ (ن) سے جلوس کی شکل میں اپنے اپنے کاغذات نامزدگی جمع کر ادیئے ہیں این اے 158سے سابق وزیراعظم سید یوسف رضا گیلانی پیپلز پارٹی سے اور ابراہیم خان تحریک انصاف نے اپنے اپنے کاغذات نامزدگی داخل کر دیئے ہیں جبکہ صوبائی حلقہ 221سے تحریک انصا ف سے رانا سہیل نون، مسلم لیگ (ن) سے رانا اعجاز نون، اور پیپلز پارٹی سے ابھی تک کوئی سیاسی قد آور شخصیت نہیں ہے جبکہ صوبائی حلقہ 220تحریک انصاف سے میاں طارق عبداللہ، اور میاں ظفراللہ بھٹی نے بھی کاغذات نامزدگی جمع کرا دیئے ہیں اور پیپلز پارٹی سے میاں کامران عبداللہ مڑل نے کاغزات نامزدگی داخل کر ا دیئے ہیں اور این اے 158اور صوبائی حلقہ 221سے بھی نواب لیاقت علی خان نے کاغذات نامزدگی داخل کر دئے ہیں نواب لیاقت علی خان ابھی تک اپنا سیاسی فیصلہ نہیں کر پا رہے ہیں مگر تاہم نواب لیاقت علی خان کا سید یوسف رضا گیلانی سے ملاقا ت کا سلسلہ جاری ہے توقع کی جارہی ہے کہ نواب لیاقت علی خان سید یوسف رضا گیلانی کے پینل سے صوبائی حلقہ 221سے الیکشن لڑ سکتے ہیں ۔ جلال پور پیر والہ سے نامہ نگارکے مطابق تحصیل جلال پور مکمل اور تحصیل شجاع آبادکے جزوی علاقوں پر مشتمل حلقہ این اے 159 میں مجموعی طور پر 5 امیدواروں ، صوبائی حلقہ 222 میں 4 اور صوبائی حلقہ 223 میں 3 امیدواروں نے کاغذات نامزدگی داخل کیے ہیں سابق صوبائی وزیر نغمہ مشتاق لانگ اور دیوان ذوالقرنین بخاری سمیت دیگر متوقع امیدوار آج سوموار کو اپنے کاغذات نامزدگی داخل کروائیں گے۔ اتوار کے روز تک این اے 159 کے ریٹرننگ آفیسر ایڈیشنل سیشن جج رانا عبدالحکیم کے دفتر میں رانا شہر یار نون، اشفاق احمد کھاکھی، ملک غلام عباس کھاکھی، دیوان حیدر علی بخاری(سابق تحصیل ناظم جلال پور دیوان مظفر بخاری کے بیٹے) اور تحریک انصاف کے ٹکٹ ہولڈر رانا محمد قاسم نون اپنے کاغذات نامزدگی داخل کروا چکے تھے۔ پی پی 222 کی نشست کے لیے حاجی ملک محمد بخش لانگ، ملک لعل محمد جوئیہ، ملک آصف رضا جوئیہ اور ملک غلام عباس کھاکھی نے جبکہ پی پی 223 کی نشست کے لیے ملک اسلم کنہوں، رانا غضنفر پہلوان عرف گجی پہلوان اور تحریک انصاف کے ٹکٹ ہولڈر ملک اکرم کنہوں نے بھی اپنے کاغذات نامزدگی جمع کروا دئیے۔ خانیوال سے بیورونیوز کے مطابق الیکشن2018کے سلسلے میں گزشتہ روز اتوار کے باوجود متعدد امیدواروں نے کاغذات نامزدگی داخل کروائے ‘تفصیل کے مطابق ریٹرننگ آفیسر غلام عباس سیال کی عدالت میں تحریک انصاف کے ٹکٹ ہولڈر سردار احمدیارہراج نے قومی حلقہ151کیلئے کاغذات نامزدگی داخل کروائے اسی طرح قومی حلقہ 151سے ہمایوں خان نے کاغذات جمع کروائے ۔ریٹرننگ آفیسر صوبائی حلقہ205سول جج شاہ زیب ڈار کی عدالت میں تحریک انصاف کے امیدوار سردار حامدیارہراج نے کاغذات جمع کروائے اسی طرح ریٹرننگ آفیسر صوبائی حلقہ 206زبیر غوری کی عدالت میں تحریک انصاف کے امیدوار رانا محمدسلیم ،پاکستان پیپلز پارٹی کے پلیٹ فارم سے ہمایوں خان نے کاغذات نامزدگی داخل کروائے تمام امیدوار جلوسوں کی شکل میں کاغذات نامزدگی داخل کروانے آئے ۔ کبیروالا‘بارہ میل سے سٹی رپورٹر‘نمائندہ پاکستان کے مطابق گزشتہ روز تحصیل کچہری کبیروالا میں ریٹرننگ آفیسر حلقہ این اے 150اظہار الحق علوی کے پاس سابق ممبر قومی اسمبلی بیرسٹر رضا حیات ہراج،مہر منیر اکبر ہراج نے این اے 150پر اپنے کاغذات نامزدگی جبکہ پی پی 203پر سابق ممبر پنجاب اسمبلی مہر اکبر حیات ہراج،حافظ محمدمدنی اور پی پی 204پر مہر منیر اکبر ہراج ،سردار مظفر محمود خان سیال،مہر عباس ظفر ہراج،سید ثقلین گردیزی ،ملک محمد ناہید دھرالہ ،ملک محمد آصف نائچ نے حامیوں کے ہمراہ اپنے کاغذات نامزدگی جمع کرادیئے ہیں جبکہ سابق سپیکر قومی اسمبلی سید فخرامام،قائد سید گروپ ڈاکٹر سید خاور علی شاہ ،سابق صوبائی وزیر سید حسین جہانیاں گردیزی،مولانا عبدالخالق رحمانی،قاری ظہور احمد صارم ،ملک محمد اشرف تھہیم،مولانا عبدالمجید انوراور دیگر امیدواران اپنے متعلقہ حلقوں سے کاغذات نامزدگی آج جمع کرائیں گے۔وہاڑی سے بیورو رپورٹ‘نما ئندہ خصوصیکے مطابقجنرل انتخابات 2018کیلئے کاغذات نامزدگی جمع کروانے کاسلسلہ چھٹے روزبھی جاری رہاگزشتہ روزکاغذات نامزدگی جمع کرانے والوں میں پاکستان پیپلزپارٹی کی راہنمانتاشہ دولتانہ نے این اے163کیلئے پاکستان پیپلزپارٹی کی طرف سے اورسابق ایم پی اے میاں ثاقب خورشید نیپی پی 234کیلئے پاکستان مسلم لیگ ن کی طرف سے اورمیاں نیرب خورشیدنے پاکستان مسلم لیگ ن اورپی ٹی آئی جنوبی پنجاب کے نائب صدر چودھری طاہرانورواہلہ نے کاغذات نامزدگی جمع کروائے ہیں اسی طرح سابق صوبائی وزیرنعیم خان بھابھہ نے قومی اسمبلی کے حلقہ این اے164اورصوبائی اسمبلی کے دوحلقوں پی پی 233اورپی پی234کیلئے کاغذات نامزدگی جمع کرادیئے ہیں۔ذرائع کاکہناہے کہ پی ٹی آئی کے راہنماسابق ایم این اے آفتاب خان کھچی نے پی پی234کیلئے کاغذات نامزدگی حاصل کرلئے ہیں۔ دریں اثناء پیپلز پارٹی کے ضلعی رہنما امیدوار قومی اسمبلی حلقہ این اے 164بابا محمد یعقوب لنگاہ نے بھی حامیوں کے ہمراہ ریٹرنگ آفیسر سے کا غذات نا مز د گی فارم حاصل کرلیئے ہیں اس موقعہ پر میڈ یا سے گفتگو کر تے ہوئے با با محمد یعقوب لنگاہ نے کہا کہ اپنے وکلاء سے مشاورت کرکے آج کاغذات نا مزدگی جمع کرائیں گے۔میلسی سے نمائندہ پاکستان کے مطابق تحریک لبیک پاکستان میلسی کے امیدوار صوبائی اسمبلی حلقہ پی پی 236 راؤ دلنواز نے بہت بڑے جلوس کے ہمراہ کاغذات جمع کروا دیئے جبکہ امیدوار صوبائی اسمبلی حلقہ پی پی 235 رضوان شفیق او رممبر قومی اسمبلی کے امیدوار حلقہ این اے 165 کیلئے راؤ غلام مصطفیٰ آج مورخہ 11جون کو کاغذات جمع کروائیں گے ۔مظفرگڑھ سے بیورو رپورٹ کے مطابق سردار محمد آباد ڈوگر سابق ٹکٹ ہولڈر و امیدوار قومی اسمبلی حلقہ این اے 178 نے الیکشن 2018 ء کیلئے صوبائی حلقہ پی پی 271 کیلئے آزاد امیدوار کی حیثیت سے اپنے کاغذات نامزدگی جمع کرا دیئے ہیں۔ اس موقع پر انکے ہمراہ سید طاہر عباس شاہ وائس چیئرمین خانگڑھ، میاں فیض الحسن چیئرمین یونین کونسل دین پور، صابر علی چوہان ایڈووکیٹ سمیت سینکڑوں افراد موجود تھے۔ چوک سرور شہیدسے سپیشل رپورٹرکے مطابق نگران سیٹ اپ مکمل ہوتے ہی سیاست دانوں کو اب الیکشن کی امید نظر آنے لگی ہے یہی وجہ ہے کہ سیاسی گہما گہمی شروع ہوگئی ہے امیدواروں نے جوڑ توڑ اور بھاگ دوڑ شروع کردی ہے ادھر ٹکٹ ملنے یا ملنے کی کنفیوژن کے ساتھ امیدواروں نے اپنے اپنے کاغذات نامزدگی جمع کرادیے ہیں حلقہ این اے 181پر ن لیگ کے ملک سلطان محمود ہنجرا ،پی ٹی آئی کے غلام مصطفی کھر ،پیپلزپارٹی کے احسا ن الحق نولاٹیہ اور آزاد امیدوار ڈاکٹر شبیر علی قریشی نے کاغذات نامزدگی جمع کرادیے ہیں جبکہ اصل مقابلہ سیاسی پرانے حریف ملک سلطان محمود ہنجرا اور غلام مصطفی کھر میں ہوگا ادھر پی پی 268چوک سرور شہید ودائرہ دین پناہ کے لیے ن لیگ کے قاسم ہنجرا ،تحریک لبیک کے عابد منظور باروی ،سید پیر جعفر مزمل ،ملک امان اللہ آزاد ،چوہدری اسحاق ،طارق منظور اور رانا اورنگ زیب اشرف نے آزاد حیثیت سے کاغذات نامزدگی جمع کرادئیے ہیں جبکہ عوامی راج پارٹی کے ملک عامر فہیم بھی الیکشن دوڑ میں شامل ہیں ڈاکٹر یونس اقبال سابق ٹکٹ ہولڈر پی پی 268ن لیگ کے پی ٹی آئی میں شامل ہونے کے بعد جب ان کو پذیرائی نہ ملی تو انھوں نے الیکشن لڑنے سے انکار کر دیا ہے اب ان کی جگہ ارائیں برادری سے چوہدری طارق منظور اور چوہدری محمد اسحاق مکہ ٹاؤن والے الیکشن لڑیں گے اور ارائیں برادری کا متفقہ امیدوار لانے کی کوشش کی جارہی ہے ان کے الیکشن نہ لڑنے کی صورت میں پی پی 268سے پی ٹی آئی کا ٹکٹ رانا اورنگ زیب کو مل سکتا ہے اور ارائیں برادری پہلی دفعہ کوئی الیکشن ہوگا جس میں حصہ نہ لے گی ادھر پیپلزپارٹی کے این اے 181کے امیدوا رچوہدری احسان الحق نولاٹیہ اور پی پی 268کے آذاد امیدوار پیر جعفر مزمل میں علاقائی اتحاد ہوگیا ہے اور اب دونوں امیدوار مل کر الیکشن مہم چلائیں گے پی پی 268پر بھی اصل مقابلہ ن لیگ کے ملک قاسم ہنجرا اور پیر جعفر مزمل میں ہوگا تمام امیدوار وں نے کاغذات نامزدگی جمع کرادیں ہیں جبکہ پی ٹی آئی پی پی 268کے امیدوار کا ابھی تک فیصلہ نہیں ہوسکا ،اصل انتخابی مہم عیدالفطر اور درخواستوں کی جانچ پڑتال کے بعد شروع ہوگی۔ جتوئی سے نمائندہ پاکستان کے مطابق الیکشن 2018میں اتوار کو این اے 185میں مخدوم زادہ سید باسط بخاری اور مسزباسط بخاری نے کاغزات نامزدگی جمع کرائے جبکہ جمشید احمد خان دستی سربراہ عوامی راج پارٹی،محمد معظم علی خان سابق وفاقی وزیر مملکت،مسز خان محمد جتوئی پہلے ہی کاغزات نامزدگی جمع کراچکے ہیں پی پی 272میں مخدوم سید محمد عبداللہ شاہ بخاری مرحوم کے صاحبزادوں سید باسط بخاری اور سید ہارون بخاری نے اختلافات کے باعث علیحدہ علیحدہ کاغزات نامزدگی جمع کرائے سید باسط بخاری اور سید ہارون بخاری کے کاغزات جمع کرانے سے تعداد 5 ہوگئی عبداللہ فہدلنگڑیال،شہزاد فرقان،میاں خدا بخش ڈاہاپہلے ہی کاغزات نامزدگی جمع کراچکے ہیں پی پی 275میں آج اتوار کو دو امیدواروں سید باسط بخاری اور اللہ وسایا المعروف چنوں خان لغاری کے کاغزات جمع کرانے سے تعداد 10ہوگئی جبکہ سابق وفاقی وزیر سردار عبدالقیوم جتوئی،محمد داؤد جتوئی، مسز خان محمد جتوئی،مسز چنوں خان لغاری،سمیع اللہ لغاری،خرم سہیل ایڈوکیٹ،عالم دین مولونا محمد یحٰی عباسی،محمد طلحہ برقی پہلے پی کاغذات نامزدگی جمع کراچکے ہیں۔گوگڑاں سے نامہ نگار کے مطابق مسلم لیگ ن وشہید کانجو گروپ کی حمایت یافتہ امیدوار سابقMPA پیر رفیع الدین شاہ نے ریٹرننگ آفیسرکو PP228 کیلئے کاغذاتِ نامزدگی جمع کروا دئیے اس موقع پر پیر سیّد اکبر علی شاہ سابق ممبر صوبائی اسمبلی ،سیّد مطیع الحق شاہ، نواب لیاقت علی سکھیرا، شیخ محمد عمران قریشی، سیّد ولائت حسین شاہ، سیّد علاؤ الدین شاہ، راؤ عبدالجبار،سیّد اطہر علی شاہ ، سیّد معین الدین شاہ،چوہدری منظورحسین کمبوہ،مہر رمضان چھینہ،مختار احمد شیخ،سعید احمد سومرو، میاں فیض محمد فیض کے علاوہ سینکڑوں کارکنان و سپورٹران ہمراہ تھے یاد رہے پیر رفیع الدین شاہ بخاری 2بار ممبرصوبائی اسمبلی پنجاب رہ چکے ہیں اور 2013کے جنرل الیکشن میں این اے 161حلقہ سے مسلم لیگ ن کے ٹکٹ سے بھی الیکشن لڑ چکے ہیں ،سابقہ روائت کو برقرار رکھتے ہوئے اس دفعہ بھی شہید کانجو گروپ اور ن لیگ کی حمایت کرتے ہوئے سینکڑوں کارکنان و سپورٹران کے ہمراہ ریلی کی شکل میں لودھراں ریٹرننگ آفیسر کوحلقہ پی پی 228سے کاغذات جمع کروائے گئے۔جام پور سے نامہ نگارکے مطابق ملک کے دیگر علاقوں کی طرح جام پور میں سیاسی سرگرمیوں میں اضافہ ۔ ایک قوی اور دوصوبائی حلقوں پر 56 امیدواروں نے کاغذات نامزدگی جع کرادیے ہیں۔ اتوار چھٹی کے روز بھی حلقہ این اے 193پر مسلم لیگ ن کے مرکزی رہنما وسابق وفاقی وزیر سردار اویس خان لغاری کے صاحبزادے علی احمد خان لغاری نے کاغذات نامزدگی جمع کرائے ۔ ا س موقع پر ان کے ہمراہ بھاری کارکنان کی تعداد موجود تھی۔ اسی طرح انہوں نے حلقہ پی پی 293پر کاغذات جمع کرادیئے ہیں ۔ اس کے علاوہ سابق ممبر صوبائی اسمبلی کے امیدوار سردار اطہر حسن گورچانی نے بھی حلقہ این اے 193اور پی پی 293پر جبکہ ان کے چھوٹے بھائی سردا ر عدیل حسن گورچانی نے حلقہ پی پی 294پر کاغذات نامزدگی جمع کرا دیئے۔بہاولپورسے نامہ نگارکے مطابق جماعت اسلامی پنجاب کے نائب امیر و سابق رکن پنجاب اسمبلی ڈاکٹر سید وسیم ختر نے این اے 170 اور پی پی 146 سے الیکشن لڑنے کے لیے کاغذات نامزدگی ریٹرنگ آفیسر کو جمع کرا دیئے وہ گزشتہ روز ایک بڑے جلوس کی شکل میں اپنے کاغذات جمع کرانے آئے۔حاصل پور سے نما ئندہ خصوصی کے مطابق حاصل پور سے قو می اسمبلی کے امیدوار مسلم لیگ ن کی جانب سے میاں ریاض حسین پیر زادہ اور تحریک انصاف کی جانب سے چوہدری نعیم الدین وڑائچ الیکشن لٹریں گے ۔مسلم لیگ ق کے رہنما چوہدری طارق بشیر چیمہ نے بھی کا غذات نا مزدگی جمع کرا دئیے ہیں ۔حاصل پور اور یز مان سے ایم این اے کے امیدوار ہوں گے ۔جبکہ تحریک انصاف کے ٹکٹ ہو لڈر چوہدری نعیم الدین وڑائچ کے بھائی چوہدری علیم اللہ وڑائچ نے بھی یز مان کی قو می اسمبلی کی نشست سے الیکشن لٹر نے کے لیے کاغذات نا مزدگی جمع کرا دئیے ہیں ۔جبکہ دیگر امیدوار بھی سو موار کے روز اپنے کا غذات نا مزدگی جمع کرا دیں گے ۔اس با ر قو می اسمبلی اور صو بائی اسمبلی کے امیدواروں کی تعداد پہلے سے زیادہ نظر آ رہی ہے ۔یہاں قو می اسمبلی حلقہ این اے 171کے ساتھ حاصل پور اور خیر پور ٹا میوالی پر مشتمل دو صو بائی سیٹیں ہیں ۔متوقع صو بائی امیدواروں میں سا بق ایم پی اے محمد افضل گل ‘خلیل احمد باجوہ ‘علی زین بخاری‘۔ملک محمد نعیم ایڈووکیٹ ‘احمد نواز‘میاں کا ظم علی پیر زادہ‘۔میاں عباس علی پیر زادہ ‘نواز خان عباسی ‘بلال مصطفی گردیزی سمیت دیگر شامل ہیں ۔رحیم یارخان سیبیورونیوزکے مطابق ریٹرننگ افسرکی عدالت میں حلقہ این اے 179کے لیے قمرجاویداقبال نے کاغذات نامزدگی جمع کرادئیے۔گذشتہ روز امیدوارقومی اسمبلی 179قمرجاویداقبال وڑائچ نے ریٹرننگ افسرکی عدالت میں کاغذات نامزدگی جمع کرائے ‘ کاغذات نامزدگی جمع کرانے کے بعد میڈیاسے گفتگوکرتے ہوئے انہوں نے کہاکہ (ن) لیگ اورپیپلزپارٹی ایک سکے کے دورخ ہیں جنہوں نے ہمیشہ اقتدارمیں رہ کرعوام کوبیوقوف جبکہ اپوزیشن میں آکربلندوبانگ دعوے کرکے حقوق غصب کیے‘ انشاء اللہ انتخابات میں عوام حقیقی لیڈرووٹ کے زریعے منتخب کرائیں گے تاکہ عوام کی محرومیوں کاازالہ ہوسکے۔اس موقع پرشاہ زیب وڑائچ‘ ظہورگجر‘ عامرگجر‘ محمدمحسن ودیگربھی موجودتھے۔دریں اثناء تحریک لبیک یارسول اللہؐ حلقہ پی پی 262کے امیدوارمیاں محمدراشدیاسین نے اپنے کاغذات نامزدگی درجنوں حامیوں کے ہمراہ ایک جلوس کی شکل میں جاکرجمع کرائے، اس موقع پرمیڈیاسے گفتگوکرتے ہوئے میاں محمدراشدیاسین نے کہاکہ ملک میں نظام مصطفیؐ کے نفاذکیلئے تحریک لبیک یارسول اللہؐ میدان میں آچکی ہے ہرحلقے سے تحریک کے امیدوارالیکشن میں حصہ لیں گے تحفظ ختم نبوت اوردین اسلام پھیلانے کے لئے میدان میں آئے ہیں تحریک کومزیدفعال کرنے کے لئے گراس روٹ لیول پرنیٹ ورک کووسیع کیاجارہاہے آنے والے وقتوں میں تحریک لبیک یارسول اللہؐ ایک بہت بڑی قوت بن کرابھرے گی، انہوں نے کہاکہ تحریک لبیک یارسول اللہؐ کے پروانے ہرگلی محلہ، یونین کونسلزمیں بھرپورطریقہ سے انتخابی مہم چلائیں گے عیدکے بعدعلامہ خادم حسین رضوی بھی الیکشن مہم میں حصہ لینے کے لئے رحیم یارخان کادورہ کریں گے اوراس پارٹی میں ایک نئی روح بیدارہوگی، اس موقع پرچوہدری صابرصدیق، چوہدری اشفاق کمبوہ، راناطالب، عمران سلطانی، قاری نازک حسین، چوہدری خالدکمبوہ، راناعمران سہیل، راناعبیداللہ ، چوہدری عابدرشید، چوہدری عرفان، سیداکبرشاہ، میاں احمدبلال، چوہدری محمداسلم کمبوہ ودیگرموجودتھے۔صادق آباد سے تحصیل رپورٹر کے مطابق جنرل الیکشن 2018ء میں حصہ لینے والے امیدواروں نے چھٹی کے روز بھی اپنے کاغذات نامزدگی ریٹرنگ افسران کے پاس جمع کروائے ۔ مخدوم سید مصطفی محمود نے حلقہ این اے 178کے کاغذات ریٹرنگ آفیسر محمد سیال‘ حلقہ پی پی 266کے کاغذات نامزدگی ریٹرنگ آفیسر ملک عبدالقیوم اور حلقہ پی پی 265کے کاغذات نامزدگی ریٹرنگ آفیسر ساجد محمود کے پاس جمع کروائے جبکہ میاں مجید نے صوبائی حلقہ 267کے کاغذات ریٹرنگ آفیسر محمد عادل انیس کے پاس جمع کروائے اسی طرح رئیس محبوب احمد‘رفیق حیدر لغاری‘ نہال خان عباسی‘ عبدالستار چانگ ودیگر امیدواروں نے بھی صوبائی حلقہ 266کیلئے اپنے اپنے کاغذا ت نامزدگی جمع کروا دئیے ہیں ۔

مزید : ملتان صفحہ آخر