ٹکٹ نہ ملنے پر ناراضگی ہر جماعت، روٹھوں کو ساتھ لیکر چلیں گے: شاہ محمود قریشی

ٹکٹ نہ ملنے پر ناراضگی ہر جماعت، روٹھوں کو ساتھ لیکر چلیں گے: شاہ محمود قریشی

ملتان(سپیشل رپورٹر)پاکستان تحریک انصا ف کے وائس چیئرمین مخدوم شاہ محمود قریشی نے کہا ہے کہ تحریک انصاف کو حالیہ الیکشن کے ٹکٹ کیلئے چار ہزار سے زائد درخواستیوں موصول ہوئی ہیں میں عمران خان اور پی ٹی آئی کی قیادت کے ایجنڈے کو سہراتا ہوں۔ جنہوں نے مسلسل 6دن اور 6راتیں جگا کر ٹکٹ (بقیہ نمبر15صفحہ12پر )

کے فیصلے کئے ۔ ہر درخواست گزار کو ٹکٹ نہیں دے سکتے اس لئے باامر مجبوری چھانٹی کرنا پڑتی ہے جو کہ مشکل کام ہے۔ ہم نے بہت سے حلقوں میں ٹکٹ دے دیئے ہیں۔ کچھ پر سوچ وچار جاری ہے ۔ملتان کے حلقہ این اے 154 سمیت تمام پنڈنگ ٹکٹ کا جلد فیصلہ کرینگے۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے گزشتہ روز این اے 156 کی یونین کونسل 48کے چیئرمین محمد سلیم چیمہ کی اپنے ساتھیوں سمیت تحریک انصاف میں شمولیت کے موقع پر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کیا۔ مخدوم شاہ محمود قریشی نے کہا ہر جماعت نے ٹکٹ کیلئے درخواستیوں مانگی ہیں۔ لیکن تحریک انصاف میں رش زیادہ دکھائی دے رہاہے۔ٹکٹ نہ ملنے پر ناراضگی ہر جماعت میں دکھائی دے رہی ہے۔ پی ٹی آئی کے پرانے دوست قیمتی ہیں وہ نہ ہوتے توپی ٹی آئی نہ بنتی۔ پرانے دوستوں کی ناراضگی ختم کرنے کیلئے کمیٹی تشکیل دی ہے ۔ہم روٹھے افراد کو سینے سے لگائیں گے اور ساتھ لیکر چلیں گے۔ انہوں نے کہا سلیم چیمہ ان پختہ سیاسی کارکنان میں سے ہیں جنہوں نے پی پی میں طویل عرصہ گزارا۔ پی پی کا ٹرینڈ جیالہ پکے فیصلے کرتا ہے مخدوم شاہ محمود قریشی نے کہا تحریک انصاف پاکستان کی مقبول ترین جماعت ہے۔ یہ وہ جماعت ہے جو اوپر سے مسلط ہو کرنہیں آئی ۔ یہ گلی ‘ محلے کی جماعت ہے یہاں سب کو بولنے کی آزادی ہے۔ زرادری اور نواز کا طریقہ نہیں کہ بولنے نہیں دیا جاتا یہاں عمران خان کے ساتھ سب بولتے ہیں۔ لوگ چاہتے ہیں اب عمران خان وزیراعظم بنیں۔ ہمارا مقصد ایم پی اے ‘ ایم این اے بننا نہیں۔ ہمارا مقصد افضل ہے ہم سب نے بلے کا ساتھ دینا ہے۔ میں کارکنوں تحریک انصاف سے اپیل کرتا ہوں کہ سب ملکر دیا کریں کہ عمران خان وز یراعظم بن جائیں۔ مخدوم شاہ محمود قریشی نے کہا اس دفعہ کے پی کے کے ساتھ پنجاب اور مرکز میں بھی تحریک انصاف کی حکومت ہوگی۔ اس دفعہ پنجاب کا تالہ ٹوٹے گا۔ ہم اقتدار میں آنے کے بعد دوبارہ انتخابات کرواکر ٹھوس بلدیاتی نظام لیکرآئینگے۔ انہو ں نے کہا ہم پیپلز پارٹی اور ن لیگ کی کرپشن کا مقابلہ کرینگے۔ عوام کو پی پی اور ن لیگ کے اصل چہرہ دکھائیں گے۔ انہوں نے کہا 2018ء تک انہوں نے لوڈشیڈنگ ختم کرنا تھی وہ کہاں گئے۔ انہو ں نے کہا ملک میں پانی کا بحران سنگین سے سنگین تر ہوتا جا رہاہے۔ پانی کا بحران صوبوں کی رنجش کا سبب بن سکتا ہے۔ ہم ایسا ڈیم چاہتے ہیں جس پر وفاق کی اکائیاں متفق ہوں۔ ایک سوال کے جواب میں انہو ں نے کہا کہ عمران خان سعودی عرب میں سیاسی مقصد کیلئے نہیں بلکہ عمرہ اور روضہ رسول پر حاضری دینے جا رہے ہیں۔ انہوں نے کہا ہم سندھ میں سیٹ ایڈجسمنٹ کا ارادہ رکھتے ہیں۔اسی طرح بلوچستان میں بھی سیٹ ایڈجسٹمنٹ ہوسکتی ہے۔ مخدوم شاہ محمود قریشی نے چودھری سلیم چیمہ اور ان کے ساتھیو ں کو تحریک انصاف میں شمولیت پر خوش آمدید کہا۔

مزید : ملتان صفحہ آخر