گومل یونیورسٹی ملازمین کی تنخواہوں سے اٹریکٹیوایریا الاؤنس کی کٹوتی بند کی جائے :سنڈیکیٹ ممبران

گومل یونیورسٹی ملازمین کی تنخواہوں سے اٹریکٹیوایریا الاؤنس کی کٹوتی بند کی ...

ڈیرہ اسماعیل خان( بیورورپورٹ) گومل یونیورسٹی ملازمین کی تنخواہوں سے پچاس اور پندرہ فیصد ان اٹریکٹیو ایریا الاونس کی کٹوتی بند کی جائے یونیورسٹی سنڈیکیٹ ممبران کا مطالبہ۔ یونیورسٹی کی بہتری کے نام پر معاہدہ کے تحت وصولی چھ ماہ تک کرنے کے بعد واپس کرنے کا کہا گیا تھا مگر نو ماہ سے کٹوتی جاری ہے جو غیر اخلاقی و غیر قانونی اقدام ہے گورنر چانسلر اور سیکریٹری ہائیر ایجوکیشن ڈیپارٹمنٹ سے ایکشن لینے کا مطالبہ ۔ تفصیلات کے مطابق گومل یونیورسٹی کے وائس چانسلر پروفیسر چوہدری محمد سرور اور انکی ایڈمنسٹریشن نے ملازمین کی ایسوسی ایشنز سے درخواست کی تھی کہ یونیورسٹی کی بہتری اور فنانشل پوزیشن مضبوط ہونے کے نام پر صرف چھ ماہ کے لیئے unattractive ایریا الاونس کی مد سے پچاس اور پندرہ فیصد کے حساب سے کٹوتی کرنے دی جائے جو کہ بعد میں واپس کر دی جائے گی لیکن وائس چانسلر اور ایڈمنسٹریشن مسلسل نو ماہ سے کٹوتی جاری رکھے ہوئے ہیں اور تحریری معاہدہ کی خلاف ورزی کے مرتکب ہورہے ہیں جس پر گومل یونیورسٹی سنڈیکیٹ کے ممبران پروفیسر ڈاکٹر بختیار خٹک ۔ پروفیسر ڈاکٹر نور عباس دین ۔ پروفیسر ڈاکٹر اعجاز احمد خان ۔ ڈاکٹر عبدالجبار تنویر۔ ڈاکٹر عبدالعزیز خاکوانی نے تحریری طور پر وائس چانسلر کے اس اقدام پر بھرپور احتجاج کرتے ہوئے چانسلر گورنر خیبر پختون خواہ اور سیکریٹری ہائیر ایجوکیشن ڈیپارٹمنٹ پشاور سے اس ضمن میں مداخلت کر کے ایکشن لینے کا مطالبہ کردیا کہ عید الفطر سے قبل ہماری کٹوتی کی ریکوری کی جائے اور مزید کٹوتی بند کی جائے

مزید : پشاورصفحہ آخر