زرداری کی گرفتاری سے پیپلزپارٹی پر کیا اثر پڑے گا؟ سینئر صحافی کامران خان نے بتادیا

زرداری کی گرفتاری سے پیپلزپارٹی پر کیا اثر پڑے گا؟ سینئر صحافی کامران خان نے ...
زرداری کی گرفتاری سے پیپلزپارٹی پر کیا اثر پڑے گا؟ سینئر صحافی کامران خان نے بتادیا

  

کراچی (ویب ڈیسک) سابق صدر آصف علی زرداری کو میگا منی لانڈرنگ کیس میں گرفتار کرلیا گیا اور کچھ ہی دیرمیں انہیں جسمانی ریمانڈ کے لیے احتساب عدالت پیش کیاجائے گا  ۔اس سلسلے میں سینئر صحافی کامران خان نے کہاہے کہ  آصف زرداری کی گرفتاری سے پاکستان پیپلز پارٹی کی سندھ حکومت بھی نفسیاتی دباؤ میں آگئی ہے اور وہ سمجھتی ہے یہ دباؤبڑھتا ہی جائے گا، یہ بات قابل ذکر ہے کہ سندھ کے وزیر اعلیٰ مراد علی شاہ نیب کے 3 کیسز میں زیر تفتیش ہیں اس حوالے سے ان کا معاملہ بھی کافی سنگین ہے آج کی گرفتاری پر پیپلز پارٹی نے اپنے رد عمل کا اظہار کیا کہ لیکن سیاسی مبصرین یہ سمجھتے ہیں کہ پیپلز پارٹی کے پاس اس انداز کی قوت نہیں ہے کہ وہ کوئی بھرپور تحریک چلاسکے ، وہ مسلم لیگ اور دیگر اپوزیشن جماعتوں کی ساتھی ہے مگر ان جماعتوں کے درمیان اختلافات سطحی طور پر نظر نہ آئیں مگر اندرونی طور پر بہت گہرے ہیں۔

ٹی وی پروگرام میں گفتگو کرتے ہوئے انہوں نے کہاکہ ضمانت کی درخواست مسترد ہونے کے بعد پیپلز پارٹی کے اراکین نے قومی اسمبلی میں احتجاج شروع کیا، مسلم لیگ ن والوں نے پیپلز پارٹی والوں کے ساتھ مل کر نعرے تو ضرور لگائے لیکن ان کے انداز سے کہیں یہ نہیں لگ رہا تھا کہ وہ کسی بھرپور احتجاج کا حصہ بننے جا رہے ہیں۔

پروگرام میں گفتگو کرتے ہوئے فہد حسین نے کہاکہ ایسا نہیں لگتا کہ زرداری کی گرفتاری سے اپوزیشن کے سڑکوں پر آنے کی تحریک میں کوئی تیزی آئے گی ،  زرداری کا مستقبل دو طرح سے دیکھا جاسکتا ہے، ایک قانونی، دوسرا سیاسی، قانونی طور پر ہم دیکھ چکے ہیں کہ جب نیب گرفتار کرتا ہے اس کے بعد تفتیش کا ایک لمبا سلسلہ چلتا ہے، نیب اپنی تحویل میں رکھنے کا اختیار استعمال کرے گا، بظاہر لگتا ہے کہ ریفرنس دائر ہوگا اور پھر ٹرائل ہوگا۔ دوسری طرف سیاسی پہلو یہ ہے کہ انکی گرفتاری سے پیپلز پارٹی کی سیاست پر کیا اثر پڑے گا ؟ یہ بڑا سوال ہے ؟ فوری طور پر حکومت سندھ کو کوئی خطرہ نظر نہیں آتا۔

مزید : علاقائی /سندھ /کراچی