5gٹیکنالوجی کے حوالے سے دو فرموں کی سٹڈی رپورٹ آ گئی

5gٹیکنالوجی کے حوالے سے دو فرموں کی سٹڈی رپورٹ آ گئی

  

لاہور (پ ر)ہواوے اگلی جنریشن کی5G ٹیکنالوجی کے زیادہ تر پیٹینٹس کی ملکیت رکھتا ہے جس سے یہ بات یقینی ہو جاتی ہے کہ سپلائی چین سے ہٹانے کے لیے ٹرمپ انتظامیہ کی کوششوں کے باوجود کمپنی کو ادائیگی کرنا ہو گی۔یہ بات ایک نئی اسٹڈی میں بتائی گئی ہے۔دو ریسرچ فرموں کی طرف سے کی جانے والی اس اسٹڈی میں ان ایجادات کی نشان دہی کی گئی ہے جو5G معیارات کے ساتھ بہت قریب سے جڑی ہوئی ہیں اور اسٹڈی میں یہ نتیجہ اخذ کیا گیا ہے کہ 80 فیصد سے زائد چھہ کمپنیوں،ہواوے، سام سنگ الیکٹرانک کمپنی، ایل جی الیکٹرانکس انکارپوریشن،نوکیاOyj،ایرکسن اے بی اور گروپ میں شامل واحد امریکی بیسڈ کمپنی کوال کوم انکارپوریشن کی ملکیت ہے۔یہ بات صدر ڈونلڈ ٹرمپ کے لیے پریشان کن ہو سکتی ہے جن کی انتظامیہ نے ہواوے کو روکنے کے لیے عالمی پیمانے پر کوشش شروع کر رکھی ہے۔

مزید :

میٹروپولیٹن 1 -