صوبائی دارلحکومت پشاور میں پٹرول بحران دس دن سے جاری

صوبائی دارلحکومت پشاور میں پٹرول بحران دس دن سے جاری

  

پشاور (سٹی رپورٹر)صوبائی دارلحکومت پشاور میں پیٹرول بحران دس دن سے جاری ہے جسکی وجہ سے شہر بھر میں عوام پیٹرول کے حصول کیلئے سخت گرمی میں قطاروں میں کھڑے نظرآتے ہیں تاہم صوبائی حکومت کی جانب سے عوام کو پیٹرول کی فراہمی ممکن بنانے کے حوالے سے کوئی اقدامات نہیں اٹھائے گئے جسکی وجہ سے شہری شیدید پریشانی سے دو چار ہے جبکہ متعدد پیٹرول پمپوں پر پیٹرول کے حصول کیلئے منتظر شہری ایس او پیز کا بھی خیال نہیں کر رہے جو کورونا وباء پھیلنے کے مترادف ہے جبکہ صوبہ میں پہلے ہی کورونا کیسز تیزی سے بڑھ رہے ہے تفصیلات کے شہر میں پیٹرول نایاب ہو چکا ہے اور پیٹرول بحران کے باعث پمپوں پر شہریوں کی لمبی قطاریں معمول بن چکا ہے جبکہ انتظامیہ اس ھوالے سے خاموش تماشائی بنی ہے اسکے علاوہ پیٹرول بحران سے دفاتر میں کام کرنوالے شہریوں کو بھی شدید مشکلات کا سامنا کرنا پڑھ رہا ہے جبکہ سخت گرمی اور کورونا وباء کے باعث پمپوں پر ایس او پیز کا کیال بھی نہیں رکھا جا رہا جو حکومت کیلے ایک اور چیلنج ہے شہریوں نے اس ھوالے سے مطالبہ کیا ہے کہ کورونا وباء سے پیدا ہونووالی صورت حال کے پیش نظر عوام کو پیٹرول فراہم کرنے کیلئے فلفور اقدامات اٹھائے جائے اور عوام کو ریلیف دیا جائے ۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -