مہمند،گرمی کی شدت میں اضافہ،بجلی لوڈشیڈنگ کیخلاف مظاہرے

مہمند،گرمی کی شدت میں اضافہ،بجلی لوڈشیڈنگ کیخلاف مظاہرے

  

مہمند(نمائندہ پاکستان)مہمند، سخت گرمی میں ناروا لوڈشیڈنگ کے خلاف ضلع مہمند میں جگہ جگہ احتجاجی مظاہرے۔ تحصیل حلیمزئی دورباخیل اور سنگر میں مشتعل عوام روڈ پر نکل آئے، تحصیل یکہ غونڈ میں طویل اور ظالمانہ لوڈ شیڈنگ کے خلاف تیسرے روز بھی احتجاج، علاقے کے عمائدین اور ایم پی اے نثار مومند،تاجر برادری اور عوام کی کثیر تعداد میں شرکت۔ تفصیلات کے مطابق قبائیلی ضلع مہمند میں بدھ کے روز بجلی کے ناروا اور غیر اعلانیہ لوڈشیڈنگ کے خلاف مختلف علاقوں میں اختجاجی مظاہرے ہوئے۔ ہیڈ کوارٹر تحصیل حلیمزئی کے علاقہ دورباخیل اور سنگر میں گرمی اور پینے کے پانی بحران کے ستائے ہوئے لوگ روڈ پر نکل آئے اور واپڈا مہمند اور دیگر ذمہ داران کے خلاف نعرہ بازی کی۔اور روڈ کو ٹریفک کے لئے بند رکھا۔جبکہ لوئر مہمند یکہ غنڈ میں بھی بازار کے مکینوں اور گردو نواح کے لوگوں نے تیسرے روز بھی لوڈ شیڈنگ کے خلاف اختجاج کیا۔ا س موقع پر عوامی نیشنل پارٹی کے ایم پی اے نثار مومند اور ملک جہانزیب نے خطاب کرتے ہوئے کہاکہ غیر اعلانیہ اور طویل لوڈ شیڈنگ نے عوام کو اذیت میں مبتلا کر رکھا ہے،چوبیس گھنٹوں میں دو گھنٹے کے لئے بھی بجلی نہیں دے رہے۔گھروں اور مسجدوں میں پانی ناپید ہو گیا ہے،بچوں اور بزرگوں کو شدید اذیت کا سامنا ہے،ایک طرف حکومت کورونا وائرس سے بچاؤ کے لئے لوگوں کو گھروں میں بیٹھنے کا حکم دیتی ہے جبکہ دوسری طرف شدید گرمی اور ظالمانہ لوڈ شیڈنگ کرکے ہمیں احتجاج پر مجبور کیا جارہاہے۔ شیڈول کے مطابق بجلی فراہم کرنے کی یقین دہانی کے باوجود واپڈا اپنے وعدوں سے انحراف کر رہی ہے۔ڈومیسٹک لائن پر غیر قانونی کوارٹز فیکٹریاں قائم کی گئی ہیں جسکی وجہ سے فیڈر اوور لوڈ ہیں۔اور واپڈا اور فیکٹری مالکان کی ملی بھگت سے عوام اذیت میں مبتلا ہیں۔مظاہرین نے مطالبہ کیاکہ واپڈا والے ہمارے حال پرٰ رحم کرکے شیڈول کے مطابق ہمیں بجلی فراہم کرے۔ہمارے مطالبات پر فوری عمل درآمد کیا جائے بصورت دیگر ہمارا احتجاج روزانہ کی بنیاد پر جاری رہے گا۔اور کسی ناخوشگوار واقعے کی ذمہ داری واپڈا حکام پر ہوگی۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -