لاہور ہائیکورٹ کے 4ججز سمیت درجنوں ملازمین میں کورونا کی تصدیق

لاہور ہائیکورٹ کے 4ججز سمیت درجنوں ملازمین میں کورونا کی تصدیق

  

لاہور(نامہ نگارخصوصی)عدلیہ اور اس سے وابستہ شعبوں میں کورونا وائرس کی وبا بے قابو ہوگئی،لاہورہائی کورٹ کے 4ججوں اور عملے کے درجنوں ارکان میں کورونا وائرس کی تصدیق ہوگئی،پراسیکیوٹر جنرل پنجاب کے دفتر میں 13 کورونا کے مشتبہ مریض موجود ہیں،ماتحت عدالتوں کے عملے میں بھی کورونا وائرس پھیل رہاہے،لاہورہائی کورٹ بار ایسوسی ایشن سمیت وکلاء تنظیموں نے لاہورہائی کورٹ میں فوری تعطیلات کا مطالبہ کردیا،چیف جسٹس لاہورہائی کورٹ نے معاملہ کا جائزہ لینے کے آج11جون کو ایڈمنسٹریشن کمیٹی کا اجلاس طلب کرلیاہے۔ذرائع کے مطابق لاہور ہائیکورٹ کے مسٹرجسٹس جواد حسن،مسٹر جسٹس شاہد جمیل اور مسٹر جسٹس فاروق حیدرنے خود کو گھروں میں قرنطینہ کرلیاہے،مسٹر جسٹس ساجد محمود سیٹھی کے گزشتہ روز اچانک رخصت پر جانے کے باعث ان کے کورونا کا شکار ہونے کی چہ میگوئیاں ہوتی رہیں تاہم اس بابت مصدقہ اطلاع نہیں ہے،مسٹر جسٹس شاہد کریم کورونا ٹیسٹ رپورٹ پازیٹو آنے کے باعث پہلے سے ہی خود کو گھرمیں قرنطینہ کئے ہوئے ہیں،سپریم کورٹ کے مسٹر جسٹس امین الدین خان کی کورونا رپورٹ بھی مثبت آچکی ہے،لاہورہائی کورٹ بار ایسوسی ایشن کے صدر چودھری طاہر نصراللہ وڑائچ نے روزنامہ پاکستان سے گفتگو کرتے ہوئے بتایا کہ پاکستان بارکونسل،پنجاب بارکونسل اور لاہورہائی کورٹ بار ایسوسی ایشن کے مشترکہ اجلاس میں عدلیہ اور اس سے متعلقہ اداروں میں کورونا وائرس کے غیر معمولی پھیلاؤ کا جائزہ لیاگیا جس کے بعد ہم نے چیف جسٹس لاہورہائی کورٹ سے ملاقات کرکے ان سے درخواست کی ہے کہ عدلیہ میں موسم گرما کی تعطیلات قبل از وقت کردی جائیں۔ طاہر نصراللہ وڑائچ نے بتایا کہ چیف جسٹس نے ہماری درخواست کا جائزہ لینے کے لئے لاہورہائی کورٹ کی ایڈمنسٹریشن کمیٹی کا اجلاس آج11جون کو طلب کیاہے۔پراسیکیوٹر جنرل پنجاب کی طرف سے سیکرٹری صحت کو خط لکھا گیاہے کہ ان کے دفتر میں کورونا کے 13مشتبہ مریض موجود ہیں،جن میں 2 ایڈیشنل پراسیکیوٹر جنرل،2ڈپٹی پراسیکیوٹر جنرل اور پرسنل اسسٹنٹ سمیت 13 افراد میں کورونا کی علامات سامنے آئی ہیں،خط میں پراسیکیوٹر جنرل پنجاب آفس میں تمام افراد کے ٹیسٹ کے لئے اقدامات کی درخواست کی گئی ہے،ایڈیشنل سیشن جج ذوالفقار علی کے ریڈر فیصل انور کا کرونا ٹیسٹ بھی مثبت آ گیاہے،دریں اثناء لاہورہائی کورٹ کے ایڈیشنل رجسٹرار اور پرائیویٹ سیکرٹریوں سمیت درجنوں ملازمین کے کورونا ٹیسٹ کی رپورٹ مبینہ طور پرمثبت آئی ہے ان میں پرائیویٹ سیکرٹری ظہور احمد جاوید،پی اے ضیاء الرحمان، جسٹس جواد حسن کی عدالت کی خاتون لاء افسر اسسٹنٹ اٹارنی جنرل سعدیہ ملک،دفتری عبدالوہاب، ڈرائیور عظمت بھی شامل ہیں،اس سے قبل بھی 40کے قریب ہائی کورٹ کے ملازمین میں کورونا وائرس کی رپورٹ مثبت آچکی ہے۔

کورونا ٹیسٹ

مزید :

صفحہ آخر -