سٹاک مارکیٹ میں تیزی، انڈیکس48 261.پوائنٹس بڑھ گیا

  سٹاک مارکیٹ میں تیزی، انڈیکس48 261.پوائنٹس بڑھ گیا

  

کراچی (اکنامک رپورٹر) پاکستان اسٹاک مارکیٹ میں کاروباری ہفتے کے تیسرے روز بدھ کو تیزی کا رجحان غالب رہااورکے ایس ای 100 انڈیکس 261.48پوائنٹس کے اضافے سے 35 ہزار کی نفسیاتی حدکو بحال کرتے ہوئے 35065.08 پوائنٹس کی سطح پرپہنچ گیا جب کہ 53.63فیصد کمپنیوں کے حصص کی قیمتوں میں اضافہ ریکارڈکیا گیا جس کے نتیجے میں مارکیٹ کی سرمایہ کاری مالیت میں ایک36 ارب 72کروڑ41لاکھ روپے بڑھ گئی البتہ حصص کی لین دین کے لحاظ سے کاروباری حجم منگل کی نسبت 8.23فیصد کم رہا۔پاکستان اسٹاک ایکس چینج میں گزشتہ روزسرمایہ کاروں کی جانب سے منافع بخش کمپنیوں کے شیئرز کی خریداری کی گئی جس کے باعث تیزی کا رجحان رہا اور ٹریڈنگ کے دوران کے ایس ای100انڈیکس 35ہزار کی نفسیاتی حد کو عبور کرتے ہوئے 35113پوائنٹس کی بلندسطح پر پہنچ گیا بعد میں 35100کی نفسیاتی حد بحال نہ رہ سکی لیکن مجموعی طور پر تیزی غالب آگئی اورمارکیٹ کے اختتام پرکے ایس ای100انڈیکس261.48پوائنٹس کے اضافے سے 35065.08پوائنٹس ہو گیاجبکہ کے ایس ای30انڈیکس 123.40پوائنٹس کے اضافے سے15311.81پوائنٹس اور کے ایس ای آل شیئرز انڈیکس145.34پوائنٹس کے اضافے سے24997.65پوائنٹس پر بند ہوا۔ گزشتہ روز مجموعی طور پر371کمپنیوں کے حصص کاروبار ہوا جس میں سے 199کمپنیوں کے حصص کی قیمتوں میں اضافہ152میں کمی اور 20کمپنیوں کے حصص کی قیمتوں میں استحکام رہا۔تیزی کے سبب سرمائے کا مجموعی حجم65کھرب91ارب94کروڑ89لاکھ روپے سے بڑھ کر66کھرب28ارب67کروڑ30لاکھ روپے ہو گیاجب کہ کاروباری حجم 21کروڑ86لاکھ 56ہزار شیئرز رہا جومنگل کے مقابلے میں ۱یک کروڑ96لاکھ 26ہزار شیئرزکم ہے۔قیمتوں میں اتار چڑھاؤ کے اعتبار سے سیپ ہائر فائبر کے حصص کی قیمت 51.14روپے کے اضافے سے 736.15روپے اورسیپ ہائر ٹیکس کے حصص کی قیمت 50.66روپے کے اضافے سے850.67روپے ہو گئی جبکہ نیسلے پاکستان کے حصص کی قیمت 40روپے کی کمی سے6650روپے اورصنوفی ایونٹس کے حصص کی قیمت 33.99روپے کی کمی سے840روپے پر آ گئی۔نمایاں کاروباری سرگرمیوں کے لحاظ سے پاک ریفائنری، ٹی آر جی پاک،بینک آف پنجاب،یونٹی فوڈز،لوٹی کیمکل،اینگرو پولیمر،ہیسکول پٹرول، میپل لیف،آزگارڈ نائن اورہم نیٹ ورک کے حصص سرفہرست رہے۔مقامی کرنسی مارکیٹوں میں بدھ کو بھی پاکستانی روپے کے مقابلے میں امریکی ڈالر سمیت دیگر کرنسیوں کا دباوٗ برقرار رہا جس کے نتیجے میں امریکی ڈالر 164.80روپے کی بلند سطح پر پہنچ گیا جب کہ یورو اور برطانوی پاونڈ کی قدر میں 2روپے اور سعودی ریال ویوے ای درہم کی قدر میں 30پیسے کامزید اضافہ ریکارڈ کیا گیا۔فاریکس ایسوسی ایشن آف پاکستان کے مطابق گزشتہ روز انٹر بینک میں امریکی ڈالر کی قدر میں 20پیسے کا اضافہ ہوا جس سے ڈالر کی قیمت خر ید164.30روپے سے بڑھ کر164.50روپے اور قیمت فروخت164.60روپے سے بڑھ کر164.80روپے ہوگئی جب کہ اوپن کرنسی مارکیٹ میں ڈالر کی قیمت خرید 164روپے سے بڑھ کر164.30روپے اور قیمت فروخت164.50روپے سے بڑھ کر164.80روپے ہوگئی دیگر کرنسیوں میں یورو اور برطانوی پاونڈ کی قدر میں 2روپے کا اضافہ ہوا جس سے یورو کی قیمت خرید180روپے سے بڑھ کر182روپے اور قیمت فروخت182روپے سے بڑھ کر184روپے ہوگئی جب کہ برطانوی پونڈ کی قیمت خرید203روپے سے بڑھ کر205روپے اور قیمت فروخت205روپے سے بڑھ کر207روپے ہوگئی۔فاریکس رپورٹ کے مطابق سعودی ریال اور یواے ای کی قدر میں بھی30پیسے کا اضافہ ہوا جس کے نتیجے میں سعودی ریال کی قیمت خرید42.70روپے سے بڑھ کر43روپے اور قیمت فروخت43.20روپے سے بڑھ کر43.50روپے ہوگئی جب کہ یواے ای درہم کی قیمت خرید43.70روپے سے بڑھ کر44روپے اور قیمت فروخت44.20روپے سے بڑھ کر44.50روپے ہوگئی۔عالمی گولڈ مارکیٹ میں سونے کی فی اونس قیمت میں 11ڈالر کا اضافہ ہوا لیکن خریداری نہ ہونے کے باعث مقامی صرافہ مارکیٹوں میں سونے کی فی تولہ قیمت 98ہزارروپے مستحکم رہی۔آل کراچی صراف اینڈ جیولرز ایسوسی ایشن کے مطابق بدھ کوانٹر نیشنل گولڈ مارکیٹ میں فی اونس سونے کی قیمت11ڈالرکے نمایاں اضافے سے بڑھ کر1720ڈالرکی سطح پر پہنچ گئی لیکن مقامی صرافہ مارکیٹوں میں بھی فی تولہ سونے کی قیمت فی تولہ سونے کی قیمت بغیر کسی تبدیلی کے 98ہزارروپے اور دس گرام سونے کی قیمت84ہزا ر19روپے مستحکم رہی۔چاندی کی فی تولہ قیمت بھی1050روپے برقراررہی۔

سٹاک مارکیٹ

مزید :

صفحہ آخر -