گرمی کی شدت اور تعلیمی ادارے

گرمی کی شدت اور تعلیمی ادارے

  

ملک بھر میں شدید گرمی کی وجہ سے مختلف اضلاع میں درجنوں طلباء کے بے ہوش ہونے کی اطلاعات ملی ہیں، اور حکومت نے یہ غور شروع کر دیا ہے کہ گرمیوں کی چھٹیاں 15جون ہی سے کر دی جائیں، تعلیمی ادارے باہمی مشاورت کے بعد 7جون کو کھولے گئے تھے اور یہ تاثر بھی دیا گیا تھا کہ گرمیوں میں دو سے ڈھائی ماہ تک دی جانے والی چھٹیوں کو ایک ماہ تک محدود کر دیا جائے گا،ابھی حتمی فیصلہ نہیں ہوا کہ یہ صورتِ حال پیدا ہو گئی۔درجہ حرارت میں یکایک اضافہ ہوا اور چھلانگ لگا کر43سے45 سینٹی گریڈ اور بعض مقامات پر50 سینٹی گریڈ تک پہنچ گیا، اس سے شہری بری طرح متاثر ہوئے کہ ساتھ ہی لوڈشیڈنگ بھی چل رہی ہے۔ محکمہ موسمیات کی طرف سے خبردار بھی کیا گیا تھا، تاہم تعلیمی نقصان کو  مد ِ نظر رکھتے ہوئے نہ  تو موجودہ درجہ حرارت کو مد ِ نظر رکھا گیا اور نہ ہی مزید گرمی کے امکان کے بارے سوچا گیا،آج جو حالات ہوئے،وہ غور طلب ہیں، فوری اقدام کی ضرورت ہے۔

مزید :

رائے -اداریہ -