ہائیکورٹ کا صوفیا مرزا کے سابق شوہر  کا نام ای سی ایل سے نکالنے کا حکم 

ہائیکورٹ کا صوفیا مرزا کے سابق شوہر  کا نام ای سی ایل سے نکالنے کا حکم 

  

 لاہور(نامہ نگارخصوصی)لاہورہائی کورٹ نے ای سی ایل میں نام شامل کرنے کیخلاف دائردرخواست پر تحریری حکم جاری کرتے ہوئے ماڈل صوفیا مرزا کے سابق شوہر عمرفاروق ظہورکا نام ای سی ایل سے نکالنے کا حکم دے دیا مسٹرجسٹس شجاعت علی خان نے درخواست گزارعمر فاروق ظہور کا نام ای سی ایل سے نکالنے کی دائردرخواست پر تحریری حکم جاری کیا، عدالتی تحریری حکم میں مزیدکہاگیاہے کہ عدالت صوفیا مرزا کے سابق شوہر کو بطور سفارت کار حاصل استثنیٰ کے تحت نام ای سی ایل سے نکالنے کا حکم دیتی ہے اوران کے ریڈ وارنٹ بھی واپس لینے کے لئے اقدامات کئے جائیں،وفاقی حکومت سمیت دیگر فریقین عدالتی حکم پر عمل کر کے تین روز میں رپورٹ عدالت میں پیش کریں عدالت نے لائبیریا کے سفارت کار کے خلاف درج مقدمہ کا تمام عدالتی ریکارڈ 15 ستمبر کو طلب کر تے ہوئے کیس کے تمام فریقین کو 30 روز میں تحریری جواب داخل کرانے کاحکم بھی دیاہے،دوران سماعت ڈپٹی اٹارنی جنرل اسد باجوہ نے عدالت کوبتایا کہ عمر فاروق ظہورکے لائبیریا کا سفارت کار تعینات ہونے قبل درخواست گزار کے خلاف فوجداری کارروائی مکمل کی گئی، درخواست گزار کا نام جب ای سی ایل میں شامل کیا گیا تب اس کوسفارت کار والا استثنیٰ بھی میسر نہیں تھا، عدالتی معاون نے عدالت کوبتایا کہ ویانا کنونشن کے تحت سفارت کار اور اسکے اہلخانہ کو استثنی اور مراعات حاصل ہے، نادرا ایکٹ کے تحت شناختی کارڈ بحق سرکار ضبط بھی کیا جا سکتا ہے۔

تحریری حکم جاری

مزید :

صفحہ آخر -