بجٹ میں ایچ ای سی کیلئے 50ارب مختص کئے جائیں،حمزہ صدیقی

  بجٹ میں ایچ ای سی کیلئے 50ارب مختص کئے جائیں،حمزہ صدیقی

  

  لاہور(پ ر)ناظم اعلیٰ اسلامی جمعیت طلبہ پاکستان کے حمزہ محمد صدیقی،حسن بلال ہاشمی، دانیال عبداللہ نے پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ پاکستان میں تعلیم حکمرانوں کی ترجیح میں شامل نہیں۔ وفاقی بجٹ اس افسوسناک رویے اور پالیسی کا عکس ہے۔ موجودہ حکومت کے گزشتہ تین سالوں میں تعلیمی بجٹ میں اضافے کے بجائے مسلسل کمی ہوتی جارہی ہے۔ حمزہ محمد صدیقی نے کہا کہ انتظامی امور اور تنخواہوں کے بجٹ میں مسلسل کمی ہوئی ہے جبکہ ترقیاتی بجٹ میں بھی خاطر خواہ اضافہ نہیں کیا گیا۔ ناظم اعلی نے مطالبہ کیا کہ رواں مالی سال کے بجٹ میں ایچ ای سی کے لیے 150 ارب روپے مختص کیے جائیں تاکہ جامعات کو مالی بحران سے نکالا جا سکے۔ انھوں نے کہا کہ اس سے طلبہ و طالبات کو ریلیف ملے گا۔ انھوں نے یونیورسٹیز میں ہاسٹلز اور ٹرانسپورٹ سمیت دیگر سہولیات بہتر بنانے کا مطالبہ بھی کیا۔ ناظم اعلیٰ کا مزید کہنا تھا کہ سرکار کی جانب سے فنڈز کٹوتی، جامعات میں نشستوں کی کم تعداد اور داخلوں میں میرٹ کی پامالی کے باعث نجی جامعات کی من مانیاں جاری ہیں، حکومت پرائیویٹ یونیورسٹیز کی نگرانی کیلیے ایک اتھارٹی بنائی جائے۔ 

مزید :

میٹروپولیٹن 1 -