کرونا کے وار جاری، ملتان 3، ڈیرہ میں مزید 2مریض جاں بحق، متعدد میں وائرس کی تصدیق 

کرونا کے وار جاری، ملتان 3، ڈیرہ میں مزید 2مریض جاں بحق، متعدد میں وائرس کی ...

  

 ملتان، ڈیرہ غازیخان(وقائع نگار، نیوز رپورٹر، سٹی رپورٹر)  نشتر ہسپتال ملتان میں گزشتہ چوبیس گھنٹوں کے دوران کورونا میں   مبتلا 03 مزید   مریض جاں بحق،اموات کی مجموعی  تعداد 829 ہو گئی  زیر علاج کورونا کے مریضوں کی  تعداد 37 ہو گئی،18 مریضوں کی حالت تشویشناک،  شبہ میں 38 مریض زیر علاج،ادھر کورونا آئی سو لیشن کے دس وارڈز میں بستروں کی تعداد 331  ، 126 (بقیہ نمبر41صفحہ7پر)

پر مریض،97 وینٹی لیٹرز  میں سے 47 وینٹی لیٹر خالی,ادھر چلڈرن کمپلیکس میں بھی کورونا وائرس میں مبتلا دو بچے زیر علاج ہیں۔ نشتر ہسپتال کے آئی سو لیشن وارڈز میں گزشتہ چوبیس گھنٹوں کے دوران ملتان کی رہائشی 80  سالہ حمیداں  بی بی،   60 سالہ کلثوم بی بی اور  بھکر کے 45 سالہ فرمان حیدر نے دم توڑ دیا ،یوں یکم اپریل 2020  سے 10جون 2021 کے درمیان کورونا کے باعث ہونے والی اموات کی مجموعی تعداد 829 ہو گئی ہے،جبکہ نشتر ہسپتال میں زیر علاج کورونا کہ مریضوں کی تعداد 37ہو گئی ہے جن میں سے 32 مریضوں کا تعلق ملتان سے ہے جبکہ زیر علاج 18 مریضوں  کی حالت تشویشناک  ہے،جبکہ کورونا کے شبہ میں 38مریض زیر علاج ہیں جن کی رپورٹس کا انتظار  ہے،ادھر رواں سال نشتر ہسپتال میں کورونا کے شبہ میں 6ہزار 462 افراد رپورٹ ہوئے جن میں سے 2 ہزار 636 افراد میں کورونا کی تصدیق ہوئی ہے،ادھر نشتر ہسپتال کے کورونا  آئی سو لیشن وارڈ میں اس وقت  126 مریض زیر علاج ہیں  جبکہ  مختص 97 وینٹی لیٹرز میں سے 47خالی رہ گئے ہیں جبکہ کورونا آئی سو لیشن بلاک میں بستروں کی تعداد  331 کر دی گئی ہے،ادھر چلڈرن کمپلیکس میں زیر علاج میاں چنوں کے 4 سالہ عبدالمنان اور چیچہ وطنی کے 9 سالہ ریحان میں کورونا وائرس میں مبتلا ہونے کے باعث تاحال علاج جاری ہے ڈیرہ غازیخان میں کرونا کے مزید دو مریض جاں بحق اور 17 نئے مثبت کیسز سامنے آگئے فوکل پرسن ٹیچنگ ہسپتال ڈاکٹر خالد تحسین کے مطابق ہسپتال میں کرونا کے دو مریض ڈی جی خان کے 85 سالہ محمد حنیف اور 70 سالہ بانو مائی جان کی بازی ہار گئے انہوں نے بتایا کہ ہسپتال میں اس وقت کرونا کے کل 30 مریض زیر علاج ہیں جن میں سے چار مریض وینٹی لیٹرز پر ہیں اور دو کی حالت تشویشناک ہے انہوں نے عوام سے اپیل کرتے ہوئے کہا کہ جلد از جلد ویکسی نیشن کرائیں اور ایس او پیز پر سختی سے عمل کریں تاکہ قیمتی جانوں کو اس موذی مرض سے محفوظ بنایا جا سکے۔ ضلع انتظامیہ ملتان نے کورونا ایس او پیز کی خلاف ورزی کرنے والوں کے خلاف کریک ڈان کے دوران حکومت کی جانب سے پابندی کے باوجود رات8 بجے کے بعد دکانیں کھولنے پر4 دکانداروں کے خلاف مقدمہ درج کر لیا ہے۔گلگشت کے ایریا میں تین سنوکر کلب بھی سیل کر دئیے گئے ہیں۔اسی طرح کورونا ایس او پیز پر عمل نہ کرنے پر7 بسوں کو تحویل میں لیا گیا اور ماسک نہ پہننے پر5 شہریوں کو2500 روپے جرمانہ کر دیا گیا۔کورونا ایس او پیز کی خلاف کرنے والوں پر مجموعی طور پر74 ہزار روپے سے زائد جرمانہ عائد کیا گیا۔ڈپٹی کمشنر کیپٹن ریٹائرڈ محمد علی اعجاز کی ہدایت پر اسسٹنٹ کمشنر کوٹ چھٹہ محمد اسد چانڈیہ نے کورونا ایس او پیز کی خلاف ورزی پر پانچ دکانیں سر بمہر کردیں۔انہوں نیعلاقہ میں پولیو ٹیموں کو بھی چیک کیا۔فنگر پرنٹ،ڈور مارکنگ سمیت ریکارڈ کی جانچ پڑتال کی۔پاکستان کو عالمی وبا سے نجات دلانے کے لئے کوششیں تیز کر دی گئیں ضلع میں 22 کورونا ویکسی نیشن سنٹرز مکمل طور پر فعال کردئیے گئے ہیں جبکہ نشتر میڈیکل یونیورسٹی کے ہال میں قائم سنٹر سے شہریوں کو 24گھنٹے کورونا ویکسی نیشن کی سہولت فراہم کی جارہی ہے۔بڑے سرکاری اور نجی اداروں کے دفاتر میں کورونا کانٹرز قائم کرکے ویکسی نیشن کا عمل بھی شروع کردیا گیا ہے۔شہریوں کو گھروں کی دہلیز پر ویکسی نیشن کی سہولت فراہم کرنے کے لئے موبائل سروس بھی شروع ہے۔ڈپٹی کمشنر علی شہزاد کی ہدایت پر ویسٹ مینجمنٹ کمپنی کے ہیڈ آفس میں کورونا ویکسی نیشن کانٹر قائم کردیا گیا ہے جہاں کمپنی کے 2400 سے زائد ورکرز اور انکی فیملیز کی ویکسی نیشن کی جارہی ہے۔ضلع ملتان میں اب تک2لاکھ 41ہزار619 افراد کی ویکسی نیشن کی جا چکی ہے گزشتہ 24گھنٹوں کے دوران ضلع میں 7206 افراد کی ویکسی نیشن کی گئی ہے۔ڈسٹرکٹ جیل کے 600 سٹاف اور انکی فیملیز کے علاوہ ملتان ائیرپورٹ پر تعینات سول ایوی ایشن، ائیرپورٹ سیکیورٹی فورس،ایف آئی اے، کسٹم اور پی آئی اے سٹاف کے 740 افراد کی ویکسی نیشن مکمل کر لی گئی ہے۔سرکاری سکولوں کے ٹیچرز،کالج لیکچررز اور یونیورسٹی پروفیسرز اور سٹاف کی ویکسین کا ہدف بھی حاصل کر لیا گیا ہے۔کورونا ویکسی نیشن نہ کرانے پر حکومت کی طرف سماجی پابندیوں کے عندیہ کے بعد سنٹرز پر رش بڑھنے لگا ہے۔ڈیرہ غازیخان سمیت ملک بھر میں کورونا ویکسینیشن میں تیزی لانے کا فیصلہ،ضلعی کے دیہی و بنیادی مراکز صحت کو ویکسینیشن سنٹر بنا دیا گیاجبکہ پرائمری و سکینڈری ہیلتھ ڈیپارٹمنٹ نے موبائل ویکسینیشن وین کا آغاز کردیا جس میں شہرکے مختلف علاقوں میں شہریوں کو ویکسین لگائی جائے گی شیڈول کے مطابق 14جو ن کوپاکستان چوک گیدڑ والا بائی پاس،15جون کوچوک چورہٹہ،16جون کوپل پیارے والی،17جون کو الغازی ٹریکٹر فیکٹری،18جون کوالحمد فیکٹری سمینہ چوک،21جون کوماڈل ٹاؤن،22جون کو ایلمنٹری سکول سٹاف،23جون کو پل ڈاٹ،24جون کو پولیس لائن،25جون کو ٹریفک چوک،28جون کو فریدآباد،29جون کو ارشاد نوحی پارک،30جون کوریلوے پلی پر موبائل وین میں شہریوں کو ویکسین لگوانے کی سہولت فراہم کی گئی ہے اس کے علاوہ دیہی مرکز صحت کالا،دیہی مرکز صحت سرور والی،دیہی مرکز صحت شادن لُنڈ،دیہی مرکز صحت شاہ صدر دین،کینال ریسٹ ہاؤس غازی میڈیکل کالج،ٹیچنگ ہسپتال ڈیرہ غازیخان،تحصیل ہیڈ کوارٹر ہسپتال فورٹ منرو،تحصیل ہیڈ کوارٹر ہسپتال کوٹ چھٹہ،سول ہسپتال سخی سرور،دیہی مرکزی صحت چوٹی زیریں،دیہی مرکز صحت قادر آبادکوٹ چھٹہ،تحصیل ہیڈ کوارٹر ہسپتال تونسہ شریف،گورنمنٹ بوائز ڈگری کالج تونسہ شریف،دیہی مرکز صحت ٹبی قیصرانی،دیہی مرکزی صحت وہو ا،دیہی مرکزی صحت بارتھی میں ویکسینیشن سنٹرز قائم ہیں اور لوگوں کو ویکسین لگائی جارہی ہے ذرائع کے مطابق آئی ایم ایف اور ورلڈ بنک نے حکومت پر زور دیا ہے کہ ویکسینیشن مہم کو تیز کیا جائے ورنہ آنے والے وقت میں پاکستانی معیشت پر منفی اثرات مرتب ہوں گے اس لئے پرائمری و سیکنڈری ہیلتھ ڈپیارٹمنٹ پنجاب نے صوبہ بھر میں ویکسینیشن میں تیزی  لانے لئے اقدامات کیے ہیں واضح رہے قبل ازیں گذشتہ دو روز میں موبائل وین کے ذریعے کمشنر و ڈپٹی کمشنر آفس کے باہر شہریوں کو ویکسین لگائی گئی۔

کرونا وائرس

مزید :

ملتان صفحہ آخر -