ڈیمانڈ نوٹس بھرنے کے بعد صارفین میٹرز سے محروم، متاثرین کا احتجاج

ڈیمانڈ نوٹس بھرنے کے بعد صارفین میٹرز سے محروم، متاثرین کا احتجاج

  

کوٹ دو(تحصیل رپورٹر)ملک کی سب سے بڑی بجلی کی تقسیم کار کمپنی ملتان الیکٹرک پاور کمپنی نے ڈیمانڈ نوٹس کے نام پر صارفین کے اربوں روپے دبا لیے، ریجن کے 13 اضلاع میں سنگل فیز اور تھری فیز میٹر سمیت پی وی سی کی شدید، قلت، ڈیمانڈ نوٹس ادا کرنے کے باوجود  6ماہ گزر گئے مگر تاحال میٹر نہ لگ سکے،صارفین سب ڈویژنوں کے چکر لگا لگا کر تھک گئے،رقم اکٹھی کرنے کیلئے مزید درخواستیں کی وصولی بھی دھڑادھڑ جاری،صارفین کا احتجاج،بجلی کے نئے میٹر لگانے کا مطالبہ،اس بارے تفصیل کے مطابق ملک کی سب سے بڑی تقسیم کار کمپنی میپکونے (بقیہ نمبر25صفحہ6پر)

نئے کنکشن کے نام پر جمع کرائے گئے ڈیمانڈ نوٹس کے صارفین کے اربوں روپے دبا لیے ہیں،میپکو کی نا اہلی کے باعث رواں مالی سال پرچیزنگ آرڈر لیٹ ہونے کے باعث پورے ریجن کے 13 اضلاع ملتان، مظفرگڑھ،ڈی جی خان سمیت دیگراضلاع میں میٹرز اور پی وی سی تار کا شدید بحران بھی پیدا ہوگیا ہے، دوسری طرف ضلع مظفرگڑھ کی سب سے بڑی تحصیل کوٹ ادو کے میپکو سب ڈویژنوں میں بھی ہزاروں ڈیمانڈ نوٹس بھی ادا ہوچکے ہیں مگراربوں روپے جمع کروانے کے باوجود کمپنی صارفین کو نئے کنکشن کیلئے میٹر فراہم کرنے میں مکمل طورپر ناکام ہوگئی ہے، 6ماہ قبل ڈیمانڈ نوٹس جمع کرانے والے صارفین سب ڈویژ ن کے چکر لگا لگا کر تھک چکے ہیں،اس حوالے سے شہریوں نے بتایا کہ دسمبر 2020 سے لے کر اب تک ایک بھی میٹر نہیں لگاجبکہ میٹر نہ ہونے کے باوجود میپکو صارفین سے دھڑا دھڑ نئے کنکشن کے لیے درخواستیں بھی موصول کر رہا ہے،صارفین نے وفاقی وزیر بجلی سمیت میپکو کے اعلی حکام سے مطالبہ کیا ہے کہ کوٹ ادو سب ڈویژن میں بجلی کینئے میٹر اور پی وی سی تار مہیا کی جائے تاکہ 6ماہ سے جمع شدہ ڈیمانڈ نوٹس والوں کی بجلی چالو ہو سکے۔

شہری

مزید :

ملتان صفحہ آخر -