گرمی کی شدت میں اضافہ، لیسکو کے متعدد فیڈرز، ٹرانسفارمز جواب دے گئے

گرمی کی شدت میں اضافہ، لیسکو کے متعدد فیڈرز، ٹرانسفارمز جواب دے گئے

  

 لاہور(خبرنگار) صوبائی دارالحکومت میں گرمی کی شدت میں مزید اضافہ ہونے کے ساتھ ہی لیسکو کے متعدد فیڈرز اور ٹرانسفارمرز ناکارہ اور فرسودہ ہونے کے باعث مکمل طور پر جواب دے گئے۔ فیڈرز کی ٹرپنگ اور فنی خرابیوں کے باعث غیراعلانیہ لوڈشیڈنگ نہ تھمنے والا سلسلہ جاری لیسکو میں بجلی کی 5000 میگاواٹ کی طلب جبکہ شارٹ فال 500 سے مزید بڑھنے کا خدشہ پیدا ہو گیا ہے۔شہری علاقوں میں لوڈشیڈنگ 6 سے 8 گھنٹے اور مضافاتی علاقوں میں 10 سے 12 گھنٹے بجلی بند رہنے لگی جبکہ بعض علاقوں میں ساری ساری رات اور سارا سارا دن بجلی کی طویل بندش کے باعث شہری شیخ اُٹھے۔ حکمرانوں اور لیسکو حکام کو جھولیاں اٹھااٹھا کر بددعائیں دینے لگے سبزہ زار سمیت متعدد علاقوں میں شہریوں کا لوڈشیڈنگ کے خلاف احتجاجی مظاہرے۔ دوسری جانب پاور مینجمنٹ سسٹم اوور لوڈ ہونے پر لیسکو افسران اور ملازمین بے بس ہو گئے تفصیلات کے مطابق صوبائی دارالحکومت میں شدید گرمی اور حبس میں مزید اضافہ ہونے کیساتھ ساتھ بجلی کی لوڈشیڈنگ کا سلسلہ بھی مزید عروج پر پہنچ گیا شدید گرمی کے مارے شہری بجلی کی طویل بندس پر عوامی نمائندوں اور لیسکو افسران کے خلاف سراپااحتجاج بن کر رہ گئے شہریوں نے لوڈشیڈنگ بڑھنے کی اصل وجہ لیسکو کا فرسودہ اور ناکارہ ترسیلی نظام قراردے دیا گزشتہ روز بھی لیسکو ریجن کے متعدد فیڈرز اور ٹرانسفارمرز فرسودہ اور ناکارہ ہونے پرجواب دے گئے اور متعلقہ علاقوں میں 10 سے 12 گھنٹے جبکہ بعد علاقوں میں 18 سے 20 گھنٹے بجلی کی سپلائی بند رہی ہے۔ اس میں لیسکو کے فیڈرز مسلم پارک، تاجپورہ، چائنہ سکیم، فتح گڑھ، بی آرب ی کینال، حیدر کرار، نبی پورہ، گلدشت ٹاؤن، ساندہ روڈ، حمید علی پارک، خفیظ پورہ، مغل پورہ، ہربنس پورہ، جی او آر فور، وفاقی کالونی، حبیب کلاونی، مدینہ کالونی، کریم پارک،رضوان گارڈن، جلو پنڈ، ماڈل ٹاؤن، عسکری ٹین، شاہ پور کانجراں، مانگا منڈی، سندر، رسول پارک روڈ علی پارک، نیو مزنگ، نیو سمن آباد، نیاز بیگ، ٹاؤن شپ، سلامت پورہ، باٹا پور، شالیمار، باغبانپورہ،شام نگر، ملک منیرروڈ سمیت دیگرعلاقوں میں قائم لیسکو کے سینکڑوں فیڈرز اور ٹرانسفارمرز  لوڈبرداشت نہ کرنے پر جواب دے چکے جس کے باعث متعلقہ علاقوں میں بجلی 10 سے 12 گھنٹے تک بند رہی ہے جبکہ مغل پورہ، گنج بازار، سبزہ زار،لال پل کے علاقوں بدھ اور جمعرات کی درمیانی رات کو 12 سے لے کر گزشتہ رات گئے تک بجلی بحال نہ ہو سکی شدید گرمی اور حبس میں شہری ہلکان ہو کر رہ گئے سبزہ زار کے شہریوں  کی بدترین لوڈشیڈنگ کے خلاف جماعت اسلامی نے وحدت روڈ ر احتجاجی مظاہرہ کیا جس میں جماعت اسلامی کے کارکنوں سمیت شہریوں کی کثیر تعدادنے شرکت کی مظاہرین سے خطاب کرتے ہوئے امیر جماعت اسلامی لاہور میاں ذکر اللہ مجاہدنے کہا کہ سخت گرمی میں بدترین لوڈشیڈنگ نے عوام کا برا حال کردیا بے تحاشہ بجلی کے بل دینے کے باوجود عوام بلا تعطل بجلی کے حصول کیلئے ترس رہے ہیں حکمران اور لیسکو کے افسران ایئرکنڈیشن کمروں اور ٹی وی پروگرامز کے سحر سے نکل کر حقیقت کا سامنا کریں انہوں نے حکومت اور لیسکو احکام سے مطالبہ کیا کہ گھنٹوں غیر اعلانیہ لوڈشیڈنگ کے خاتمے کیلئے فی الفور اقدامات کیے جائیں اس حوالے سے لیسکو کے افسران اور ملازمین کاکہنا ہے کہ شدید گرمی کے باعث بجلی کا سپلائی سسٹم اوورلوڈ ہو گیا ہے جس کے باعث صارفین کو لوڈشیڈنگ کے عذاب کا سامنا ہے اور موسم بہتر ہونے پر لوڈشیڈنگ میں کمی واقع ہو جائے گی۔ لیسکو افسران کا کہنا ہے کہ لیسکو کی طلب 5 ہزار میگاواٹ سے بڑھ گئی ہے جبکہ 500شارٹ فال کاسامنا ہے دوسری جانب شہریوں ارباز خان، احمد دین، فاخرندیم، سرفراز خان، ابریز دین محمد، احمد خان و دیگرنے بجلی کے ترسیلی نظام کو انتہائی فرسودہ اورناکارہ قرار دے دیا  شہریوں کا کہنا ہے کہ ہر سال گرمی آتے ہی بجلی اور سردی میں گیس کی لوڈشیڈنگ شروع کر دی جاتی ہے۔ لیسکو انتظامیہ گرمی میں لوڈشیڈنگ سے بچنے کے لئے انتظامات و اقدامات کیوں نہیں کرتی۔بجلی کے پاور ڈویژن اور وزراء دعوے تو بہت کرتے ہیں مگر عوام کو شدید گرمی اور حبس کے باعث مرنے کے لئے چھوڑ دیا جاتا ہے۔ اس حوالے ترجمان لیسکو کا کہنا ہے کہ شدید گرمی کے باعث ترسیلی سسٹم متاثر ہوچکا ہے۔ تاہم لیسکو کی فیلڈ ٹیمیں متحرک ہیں اور فنی خرابیوں کے باعث بند ہونے والے فیڈرز اورٹرانسفارمرز کی مرمت و تنصیب کے لئے اقدامات کئے جا رہے ہیں۔

غیراعلانیہ لوڈشیڈنگ

مزید :

صفحہ اول -