ایف سی سی آئی کے کوارڈینیٹر سرتاج خان کا ڈی سی چترال سے ملاقات

ایف سی سی آئی کے کوارڈینیٹر سرتاج خان کا ڈی سی چترال سے ملاقات

  

چترال(نمائندہ پاکستان) فیڈریشن آف پاکستان چیمبرزآف کامرس اینڈ انڈسٹری خیبرپختونخوا کے کوآرڈینیٹرسرتاج احمد خان نے چترال کے انفراسٹریکچر کی بہتری کے لئے نیشنل ہائے وے ممبر موکیش کمار،ڈپٹی کمشنر چترال حسن عابدکے ساتھ اہم اجلاس منعقد کیاگیا۔ اجلاس میں لواری ٹنل میں سائن بورڈ کی تنصب، آلودگی کا مسئلہ حل کرنے کے لئے ایگزاس سسٹم  اپ گریڈ کرکے عثماینہ کنسٹرکشن کمپنی کے بقایاجات سے جلد ادا کرنے کی ہدایت کی، کالاش ویلی روڈ کی تعمیر، دروش بازارکو پختہ کرنے اور دروش چترال روڈ پر پیچ ورک ایک مہینے کے اندراندر ڈپٹی کمشنر اور این ایچ اے ٹیم نے مکمل کرنے کی یقین دہانی کرائی۔ اجلاس میں ے دینن بائی پاس روڈ پختہ کرنے اور لواری پاس کے اوپرسڑک کو کلیئر کرنے کا فیصلہ کیا گیا۔ اجلاس میں گرم چشمہ روڈ پر کام شر وع کرنے اورکالاش ویلی روڈ جلد مکمل کرنے جبکہ چترال میں این ایچ اے کے جی ایم لیول، پراجیکٹ ڈائریکٹر اورڈپٹی ڈائریکٹر پر مشتمل ایک مکمل آفس یکم جولائی میں کام کا آغازکرے گا  وزیراعظم عمران خان اور وزیراعلیٰ خیبر پختونخوا محمود خان کے ہدایت پر چترال کے منتخب نمائندوں وزیرزادہ،ہدایت الرحمان، ایم این اے، کمشنر ملاکنڈ ڈویژن ظہیر اسلام اور سرتاج احمد خان پر مشتمل کمیٹی نے چترال کے انفراسٹریکچر بہتری کے لئے اقدامات شروع کردی اور سرتاج احمد خان کے درخواست پر شاہ سلیم باڈرسٹیشن وزٹ کا فیصلہ کرلیا اور شاہ سلیم تک آٹھ کلومیٹر سڑک کے پیچ ورک پر کام کا آغاز کا فیصلہ بھی ہوا ہے۔ سرتاج احمد خان نے کہاکہ چترال ڈیویلپمنٹ میں انفراسٹریکچرکا اہم رول ہے اور اس سے ٹورازم، انڈسٹریل اسٹیٹ، مائن منرل کے ذخائز ڈیوپلمنٹ ہونگے جبکہ کراس بارڈ ٹریڈ بھی بڑھ جائے گا اور چترال کے بزنس کمیونٹی اور بالخصوص ایف پی سی سی آئی وزیراعظم عمران خان، وزیراعلیٰ محمود خان، کمشنر ملاکنڈڈویژن ظہیر اسلام اور این ایچ اے کے اس کاوشوں کو سراہتے ہیں کہ چترال کے انفراسٹریکچر کے لئے جامع پیکج منظور کرایاہے اور اس میں چترال کے منتخب نمائندوں کا کردار بھی قابل ستائش ہیں۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -