کینڈا میں مسلم خاندان کے ساتھ پیش آنے والا واقعہ کھلی دہشتگردی ہے 

کینڈا میں مسلم خاندان کے ساتھ پیش آنے والا واقعہ کھلی دہشتگردی ہے 

  

پشاور(سٹی رپورٹر)سیکریٹری جنرل  حلقہ خواتین جماعت اسلامی پاکستان دردانہ صدیقی اور ناظمہ صوبہ خیبر پختون خوا بلقیس مراد نے اپنے ایک مشترکہ بیان میں  کینیڈا میں مسلم خاندان کے ساتھ پیش آئے والے سفاکانہ واقعے کو کھلی دہشت گردی قرار دیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ کینیڈین شخص نے معصوم عورتوں بچوں کو ٹرک تلے روند کر ثابت کیا کہ مغرب بظاہر جتنا مہذب نظر آتا ہے، حقیقت اس کے برعکس ہے، مسلمانوں سے تعصب اور اسلاموفوبیا کا شکار دہشت گرد نے مغرب میں پروان چڑھنے والی اسلام اور مسلم دشمنی کو پوری طرح عیاں کردیا ہے، اس واقعے کی جتنی مذمت کی جائے کم ہے۔۔ انہوں نے کہا کہ مغربی و یورپی دانشوروں اور ماہرین نفسیات کو اس بات کا جائزہ لینا ہوگا کہ آخر ایسے کون سے عوامل ہیں جو ان دہشت گردوں کو ایک نہتے معصوم خاندان پر ٹرک چڑھانے اور مسجد اور اسکول میں گھس کر فائرنگ کرکے معصوم انسانوں کو موت کے گھاٹ اتارنے جیسے وحشی عمل پر آمادہ کرتے ہیں۔ انہوں نے کینیڈین حکومت سے سفاک دہشت گرد کے عبرتناک سزا کا مطالبہ جبکہ شہید ہونے والے خاندان سے مکمل اظہار یکجہتی کا اعلان کیا ہے۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -