یوتھ ایکسپوژر پروگرام کے تحت اقلیتی نوجوانوں کو سیاحتی اور تاریخی علاقوں کے دورے کرائینگے 

  یوتھ ایکسپوژر پروگرام کے تحت اقلیتی نوجوانوں کو سیاحتی اور تاریخی علاقوں ...

  

 پشاور(سٹاف رپورٹر)وزیراعلی خیبر پختونخوا کے معاون خصوصی برائے اقلیتی امور وزیر نے کہا ہے کہ اقلیتی طلباء کے سکالرشپ، مذہبی سکالرشپ،  بیواؤں وغیرہ کے باقی ماندہ امدادی چیکس جون میں فائنل کردئیے جائیں گے۔ معاون خصوصی نے یوتھ ایکسپوژر پروگرام کے تحت اقلیتی نوجوانوں کو سیاحتی اور تاریخی مقامات جیسے چترال اور گلگت کے دورے کرانے کی تجویز سے اصولی اتفاق کیاہے۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے محکمہ اوقاف اور اقلیتی امور کے حوالے سے اجلاس کی صدارت کر تے ہوئے کیا۔ اجلاس میں ایم پی اے ویلسن وزیر ودیگر بھی موجود تھے۔ اس موقع پر انہوں نے کہا کہ یوتھ ایکسپوژر پروگرام کو توسیع دے رہے ہیں۔ جولائی اور اگست میں ضم شدہ قبائلی اضلاع سے 300 جبکہ بندوبستی اضلاع سے جو 40 نوجوان باقی ہے ان کو سیاحتی اور تاریخی علاقوں کے دورے کرائیں جائینگے۔ وزیر زادہ نے کہا کہ محکمہ اقلیتی امور کو جاری شدہ فنڈز سو فیصد استعمال کیا گیا ہے، جبکہ محکمہ نے اقلیتوں کے  سکالرشپس کے لئے ایڈیشنل گرانٹ کا بھی مطالبہ کیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ محکمہ اقلیتی آمور میں پلاننگ سیل کا قیام بھی جلد عمل میں لایا جائے گا، جس سے اقلیتی برادری کے مسائل اور ترقیاتی منصوبوں کی تکمیل تیزتر ہوسکے گی۔ انہوں نے کہا کہ وزیراعظم عمران خان کے وژن او وزیراعلی محمود خان کی قیادت میں بذات خود ترقیاتی منصوبوں کی نگرانی کر رہے ہیں،  اقلیتی برادری کی ترقی اور خوشحالی ممکن بنانا ترجیحات میں شامل ہیں۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -