تنخواہوں میں اضافے کیلئے وفاقی ملازمین کا پاک سیکرٹریٹ کے باہر احتجاج، داخلی دروازے بند کر دیے 

تنخواہوں میں اضافے کیلئے وفاقی ملازمین کا پاک سیکرٹریٹ کے باہر احتجاج، ...
تنخواہوں میں اضافے کیلئے وفاقی ملازمین کا پاک سیکرٹریٹ کے باہر احتجاج، داخلی دروازے بند کر دیے 

  

اسلام آباد ( ڈیلی پاکستان آن لائن) تنخواہوں میں اضافے کیلئے وفاقی ملازمین نے پاک سیکرٹریٹ کے باہر احتجاج کیا اور پاک سیکرٹریٹ کے داخلی دروازے بند کر دیے ۔

تفصیلات کے مطابق وفاقی سرکاری ملازمین کی جانب سے آج پیش کئے جانےو الے بجٹ میں تنخواہوں میں اضافے کا مطالبہ کیا ، ملازمین کی جانب سے مطالبہ کیا گیا کہ تنخواہیں مہنگائی کے تناسب سے بڑھائی جائیں ۔

واضح رہے کہ  پاکستان تحریک انصاف کی حکومت کی جانب سے آج آٹھ ہزار 400 ارب روپے کا وفاقی بجٹ پیش کیا جائے گا جس میں سرکاری ملازمین کی تنخواہوں اور ریٹائرڈ ملازمین کی پنشنز میں دس فیصد اضافے کی تجویز ہے ۔  

نجی ٹی وی اے آر وائی نیوز کے مطابق وفاقی بجٹ میں قرضوں کے سود کی ادائیگی کیلئے 3100 ارب، ترقیاتی کاموں کیلئے 2100 ارب اور دفاع کیلئے 1330 ارب روپے رکھنے کی تجویز دی گئی ہے۔ مالی سال 2021-22 کے بجٹ میں سرکاری ملازمین کی تنخواہوں میں 10 سے 15 فیصد تک اضافے کی تجویز ہے۔

حکومت کی جانب سے ٹیکس کی مد میں وصولیوں کا ہدف پانچ ہزار 800 ارب روپے سے زائد رکھا گیا ہے۔  کرنٹ اکاؤنٹ خسارے کا ہدف دو ارب 30 کروڑ ڈالر جبکہ ترسیلات زر کا ہدف 31 ارب 30 کروڑ ڈالر مقرر ہو سکتا ہے۔

مزید :

قومی -