’ ہاتھی کے دکھانے والے دانت اپنے زخم لگا چکیں گے تو پھر۔۔۔پرویز رشید نے بجٹ پر کڑی تنقیدکرتے ہوئے پریشان کن بات کہہ دی

’ ہاتھی کے دکھانے والے دانت اپنے زخم لگا چکیں گے تو پھر۔۔۔پرویز رشید نے بجٹ ...
’ ہاتھی کے دکھانے والے دانت اپنے زخم لگا چکیں گے تو پھر۔۔۔پرویز رشید نے بجٹ پر کڑی تنقیدکرتے ہوئے پریشان کن بات کہہ دی

  

اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن)مسلم لیگ ن کے مرکزی رہنما اور سابق وفاقی وزیر اطلاعات سینیٹر پرویز رشید نے وفاقی بجٹ پر شدید تنقید کرتےہوئے کہا ہے کہ بجٹ کے نام پر جو سبز باغ آج دکھاۓ جا رہے ہیں، وہ کل ہی سے منڈیوں ، بازاروں اور دکانوں پر کالے ناگ کی طرح پھن پھلاۓ عوام کو ڈستے نظر آنے لگیں گے ۔

تفصیلات کے مطابق مائیکرو بلاگنگ ویب سائٹ پر ٹویٹ کرتےہوئے سینیٹر پرویز رشید نے کہا ہےکہ  ہاتھی کے دکھانے والے دانت اپنے زخم لگا چکیں گے تو پھر آئی ایم ایف کے کھانے والے دانتوں کی باری ہے ، جن کا چبانا ضرب کاری سے کم نہیں ہو گا۔

واضح رہے کہ پاکستان تحریک انصاف کی وفاقی حکومت نے مالی سال 22-2021 کا بجٹ قومی اسمبلی میں پیش کردیاہے،بجٹ کا کل حجم 8 ہزار 487 ارب روپے ہے،آئندہ مالی سال کے بجٹ میں وفاقی ترقیاتی بجٹ کا حجم 900 ارب روپے، دفاع کیلئے 1373 ارب ،سود کی ادائیگیوں کیلئے 3 ہزار 60 ارب، تنخواہوں اور پنشن کیلئے 160 ارب اور صوبوں کو این ایف سی کے تحت ایک ہزار186 ارب روپے مختص کیے گئے ہیں۔

مزید :

قومی -