5390ارب حجم پر مبنی پنجاب کا آئندہ مالی سال کا بجٹ 13جون کو پیش کیا جائیگا

  5390ارب حجم پر مبنی پنجاب کا آئندہ مالی سال کا بجٹ 13جون کو پیش کیا جائیگا

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

                                                                                                لاہور(این این آئی)پنجاب کا آئندہ مالی سال 2024-25کا بجٹ 13جون بروز جمعرات کو پیش کیا جائیگا، صوبائی وزیر خزانہ مجتبیٰ شجاع الرحمان بجٹ پیش کرینگے۔ذرائع نے بتایا ہے آئندہ مالی سال کے بجٹ کا حجم رواں مالی سال کے 4480ارب 70کروڑ روپے کے مقابلے میں 910ارب روپے(20.3فیصد) اضافے سے5390ارب رکھے جا نے کا تخمینہ ہے۔ آئندہ مالی سال کیلئے این ایف سی کی مد میں پنجاب کو 3700ارب روپے ملنے کا امکان ہے جبکہ صوبے کی اپنی آمدن کا تخمینہ 1027ارب روپے لگایا گیا ہے۔ تنخواہوں کی مد میں 597ارب، پنشن کی مد میں 447ارب اورسروس ڈلیوری پر اخراجات کا تخمینہ 841ارب روپے ہے۔ترقیاتی بجٹ کی مد میں 800ارب،رمضان پیکج کیلئے 30ارب، سی بی ڈی کو 8ارب،تعلیم کیلئے 600 ارب، صحت کیلئے 406ارب روپے مختص کرنیکی تجاویز پیش کی جائینگی، وزیر اعلی روشن گھرانہ کیلئے 9.8ارب،اپنی چھت اپنا گھر منصو بے کے تحت 7ارب روپے مختص کئے جانے کا امکان ہے،گرین پاکستان انشیٹیو کیلئے 40ارب،صحافیوں کی فلاح و بہبود کیلئے انڈومنٹ فنڈ کیلئے 1ارب روپے رکھے جانے کا تخمینہ ہے۔صوبے کی اپنی آمدن کیلئے محصولات میں پنجاب ریونیو اتھارٹی کیلئے ٹیکس وصولی کا ہدف 300ارب،بورڈ آف ریونیو کیلئے 105ارب اورایکسائز اینڈ ٹیکسیشن کو 55 ارب روپے کا ہدف دئیے جانے کا امکان ہے۔آئندہ مالی سال کے بجٹ میں بیرونی قرضوں کی ادائیگی کیلئے 121ارب روپے رکھے جائینگے۔غیر صوبائی محاصل میں پنجاب کا ہد ف 558ارب روپے رہنے کا امکان ہے۔ پنجاب میں سرکاری ملازمین کی تنخواہوں اور پنشنرز کی پنشن میں وفاق کی پیروی کرتے ہوئے اضافہ کیا جائیگا۔

پنجاب بجٹ

مزید :

صفحہ اول -