بجٹ میں ریلیف صفر، تاجر تنظیمیں بڑے احتجاج کیلئے تیار

بجٹ میں ریلیف صفر، تاجر تنظیمیں بڑے احتجاج کیلئے تیار

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

ملتان (نیوز رپورٹر)مرکزی تنظیم تاجران پاکستان نے بجٹ میں ریلیف نہ ملنے پر ملک گیر احتجاجی تحریک چلانے کا اعلان کر دیا ہے اور تاجر دوست سکیم کو تاجر کش سکیم قرار دیا ہے وزیر خزانہ نے اگر بجٹ پر صرف دستخط ہی کرنے ہیں تو ملک آئی ایم ایف کے پاس گروی رکھ دیں اب بھی وقت ہے کہ 80 لاکھ سے زائد چھوٹے تاجروں کی واحد نمائندہ مرکزی تاجر تنظیم سے مذاکرات کیے جائیں اور ان کی وزیر خزانہ کو دی گئی تجاویز پر من و عن عمل درامد کیا جائے نام ونہاد تاجر چیئرمین دہرا معیارنہ رکھیں اور تاجروں کی آنکھوں میں دھول نہ جھونکیں دھوکہ دہی سے بازرہیں ایک ہی(بقیہ نمبر18صفحہ7پر)

 تنظیم کا ایک شخص تاجر دوست سکیم کا کنوینئر بن کر تاجروں کے گلے کا ٹنے کے لئے تیار ہے اور تاجر دوست سکیم کے نام پر 6 بڑے شہروں میں سرکاری دفاتر اور سرکاری گاڑی کی مراعات لے رہا ہے اور دوسرا تاجر دوست سکیم کے خلاف پر یس کانفرنسز کرکے تاجر برادری کو دھوکہ دے رہا ہے ان خیالات کا اظہار مرکزی تنظیم تاجران پاکستان کے مرکزی چیئرمین خواجہ سلیمان صدیقی،جنوبی پنجاب کے صدر شیخ جاوید اختر، ضلع ملتان کے صدر سید جعفر علی شاہ،ملتان صدر خالد محمود قریشی، جنوبی پنجاب چیئرمین جاوید اختر خان، رالیاقت علی، تنویر حسین لنگاہ، سید کفایت حسین، محمد اعجاز، ملک مزمل کھاکھی،کامران بھٹہ، شیخ الطاف، چوہدری عبد المنان گوندل، خواجہ انیس، ملک قیصر کمبوہ، شیخ ندیم، شیخ فیصل محمود، شاہد بھٹہ، یونس قریشی ودیگر نے پریس کانفرنس کے دوران کیا۔خواجہ سلیمان صدیقی نے مزید کہا کہ چھوٹے تاجر اور عوام پہلے ہی 42 قسم کے ٹیکسز دے رہے ہیں اب مزید ٹیکس برداشت نہیں کریں گے۔آئی ایم ایف اور ورلڈ بینک کے نام پر لوٹ مار جاری ہے نہ تاجر دوست سکیم کو تسلیم کرتے ہیں اور نہ ہی شناختی کارڈ کی شرط سمیت کسی نت نئے ٹیکس کو قبول کریں گے اگر مزید ٹیکس نافذ کیے گئے تو مرکزی تنظیم تاجران پاکستان ملک گیر احتجاجی تحریک چلانے پر مجبور ہو جائے گی اور تاج برادری پہیہ جام،ہڑتال، شٹر ٹان اور احتجاجی مظاہروں سے گریز نہیں کریں گے تاجر برادری کے شانہ بشانہ کھڑے ہیں ان کے حقوق کے لیے پہلے بھی قربانیاں دیں اور اب بھی قربانیاں دینے کو تیار ہیں۔