سپریم کورٹ کاسعد رفیق کو بیان حلفی داخل کرنے کا حکم

سپریم کورٹ کاسعد رفیق کو بیان حلفی داخل کرنے کا حکم

لاہور(نامہ نگار خصوصی )سپریم کورٹ نے خواجہ سعد رفیق کو پیراگون سٹی کا مالک نہ ہونے کی بابت بیان حلفی داخل کرنے کا حکم دیدیا ۔سپریم کورٹ لاہور رجسٹری میں ایل ڈی اے سٹی از خود نوٹس کیس کی سماعت کے دوران وزیرریلورے خواجہ سعد رفیق نے عدالتی حکم پر پیش ہوکر بیان دیا کہ ان کا پیراگون سٹی سے کوئی تعلق نہیں ہے ۔وہ اس کے مالک نہیں ہیں جس پر چیف جسٹس نے کہا کہ پورا شہر کہہ رہا ہے کہ پیرا گون سٹی آپ کا ہے ۔خواجہ سعد رفیق نے کہا کہ الزامات سن سن کر میرے کان پک چکے ہیں ،خواجہ سعد رفیق نے کہا کہ میرا اس سکیم سے کوئی تعلق نہیں، سکیم کے مالکان اور شیئرہولڈرز میرے حلقے کے ووٹر ہیں اور میرے ان کیساتھ بہت اچھے تعلقات ہیں ۔چیف جسٹس نے کہا کہ آپ سیاسی تقریر نہ کریں ،سیدھی بات کریں ،سارا شہر کہہ رہا ہے کہ آپ کا اس سکیم سے تعلق ہے ،عدالت نے خواجہ سعد رفیق کو ہدایت کی کہ وہ اس بابت بیان حلفی عدالت میں داخل کریں۔جمعرات کو سپریم کورٹ نے ایل ڈی اے سٹی از خود نوٹس کیس کی سماعت کے دوران اس پراجیکٹ کے حوالے سے پیرا گون سٹی کا نام سامنے آنے پر خواجہ سعد رفیق کو طلب کیا تھا۔کیس کے آغاز پر چیف جسٹس نے خواجہ سعد رفیق کو پنجابی زبان میں مخاطب کرتے ہوئے کہا کہ سعد صاحب ،اگے روسٹرم تے آجاؤ تے ہن دسو جو کچھ اخبارات وچ کہندے او۔جس پر خواجہ سعد رفیق روسٹرم پر آگئے ،انہوں نے ایک موقع پر کہا کہ مجھے سوشل میڈیا پر کبھی ہاؤسنگ سوسائٹیوں کا اور کبھی ٹوینز ٹاور کا مالک بنا دیا جاتا ہے ،میڈیا ہاؤسز پر میرے خلاف سپونسرڈ پروگرام کروائے جاتے ہیں۔

سعد رفیق، بیان حلفی

مزید : صفحہ اول