شادی کی تقریب میں آتشبازی،گولہ سر پر پھٹنے سے محنت کش چل بسا

شادی کی تقریب میں آتشبازی،گولہ سر پر پھٹنے سے محنت کش چل بسا

بورے والا:(تحصیل رپورٹر) نواحی آبادی مدینہ کالونی کا رہائشی غریب محنت کش ایک معصوم بچی کا باپ محمد بوٹا گذشتہ شب نواحی گاؤں537ای بی میں اپنے قریبی رشتہ دار جاوید کی رسم مہندی میں شرکت کے لیے گیا جہاں آتش بازی کرتے ہوئے ایک بارودی گولہ اُسکے سر پر لگ کر پھٹ گیا جس(بقیہ نمبر25صفحہ12پر )

سے وہ لہولہان ہو کر گر گیا اُسے فوری طور پر تحصیل ہیڈ کوارٹر ہسپتال بورے والا لایا گیا جہاں وہ زخموں کی تاب نہ لاتے ہوئے جاں بحق ہو گیا جس کی نعش اُسکے ورثاء اپنے گھر لے آئے ابھی جاں بحق نوجوان کے ورثاء اور رشتہ دار اُسکی موت پر بین کر رہے تھے کہ اچانک رات گئے ایس ایچ او تھانہ ماچھیوال چوہدری عبدالرشید پولیس کی بھاری نفری اور ایلیٹ فورس کے جوانوں کے ہمراہ گلی میں آگیا آتے ہی پہلے متاثرہ گھر جہاں میت پڑی تھی گھر میں گھس کر عورتوں کو غلیظ گالیاں دیتے ہوئے پوچھتا رہا کہ آتش بازی کرنے والے ملزمان کہاں چھپائے ہیں انہیں باہر نکالو جس کے بعد پوری گلی میں اُنکے تمام قریبی رشتہ داروں کے گھروں میں بغیر سرچ وارانٹ گھس کر سوئی ہوئی خواتین اور مردوں کو بستروں سے نکال کر ملزمان تلاش کرتا رہا جس نے اس دوران خواتین کی بے حرمتی بھی کی اور 14نوجوانوں کو حراست میں لیکر تھانہ ماچھیوال لے گیا ایس ایچ او تھانہ ماچھیوال کی اس مبینہ پولیس گردی اور بغیر سرچ وارنٹ رات گئے گھروں میں داخل ہو کر چادر چاردیواری کا تقدس پامال کرنے کے خلاف جاں بحق نوجوان کے قریبی رشتہ داروں حاجی محمد اشرف،محمد ایوب،محمد شکیل،ضلعی صدر پیپلز لیبر بیورو محمد صدیق بھلر کی قیادت میں سینکڑوں مرد و خواتین نے نعش ملتان روڈ پر رکھ کر احتجاجی مظاہرہ شروع کر دیا مظاہرین نے روڈ بلاک کر دی اس موقع پر انہوں نے الزام عائد کیا کہ پولیس نے غنڈی گردی اور پولیس گردی کی تمام حدیں عبور کر کے چنگیز خاں کی یادتازہ کر دی غمزدہ خواتین کے ساتھ بے ہودگی اور غلیظ گالیاں کسی صورت برداشت نہیں اگر پولیس کو کوئی شخص مطلوب تھا تو وہ آکر ہم سے بات کرتے لیکن انہوں نے آتش بازی کے واقعہ میں اپنی مجرمانہ غفلت کا سارا ملبہ معصوم اور بے گناہ افراد پر ڈالنے کی شرمناک حرکت کی ہے اور اُلٹا پولیس نے ہمارے بے گناہ افراد کو گھروں سے اُٹھا کر تھانے لیجا کر انہیں ہراساں کیا ہم ایس ایچ او کی اختیارات سے تجاوز اور پولیس گردی پر اْسکی معطلی اور قانونی کاروائی تک چین سے نہیں بیٹھیں گے اس موقع پرمقامی انتظامیہ اور ڈی ایس پی طاہر مجید ملک نے مشتعل مظاہرین سے مذاکرات کے بعد انہیں مکمل انصاف کی فراہمی،بے گناہ افراد کو رہا کرنے اور ایس ایچ او کے خلاف کاروائی کی یقین دہانی کروائی جس کے بعد مظاہرین منتشر ہو گئے تھانہ ماچھیوال پولیس نے اس واقعہ پر جاں بحق ہونے والے محنت کش نوجوان محمد بوٹا،اُسکے کزن محمد نوید اور آتش باز احمد علی سمیت6افراد کے خلاف انسداد دہشت گردی ایکٹ کے تحت مقدمہ درج کرکے آتش باز کو گرفتار کر لیا جاں بحق نوجوان کی نعش پوسٹمارٹم کے بعد جب ورثاء کے حوالے کی تو انہوں نے پھر ملتان روڈ پر نعش رکھ کر پولیس گردی کے خلاف مظاہرہ کیا اور ایچ او کے خلاف کاروائی کے علاوہ بے گناہ کمسن نوید کے نام مقدمے سے خارج کرنے کا مطالبہ کیا۔

گولہ

مزید : ملتان صفحہ آخر

لائیو ٹی وی نشریات دیکھنے کے لیے ویب سائٹ پر ”لائیو ٹی وی “ کے آپشن یا یہاں کلک کریں۔


loading...