بچوں کے بعد ریٹائرڈ ملازمین بھی حوثیوں کی جنگ کا ایدھن بن گئے

بچوں کے بعد ریٹائرڈ ملازمین بھی حوثیوں کی جنگ کا ایدھن بن گئے

صنعاء(این این آئی)یمن میں ایران نواز حوثی باغیوں کی طرف سے بچوں کو جنگ میں جھونکے جانے کے حربوں کے بعد افرادی قوت پوری کرنے کے لیے ریٹائرڈ ملازمین کو بھی جنگ کا ایندھن بنانے کی کوششیں شروع کر دی گئی ہیں۔عرب ٹی وی کے مطابق حوثی باغیوں نے ملک میں افرادی قوت پوری کرنے کے لیے رضاکارانہ بھرتی مہم شروع کی تھی۔ اب ایک قدم اور آگے بڑھ کر باغیوں کی طرف سے سابق ملازمین کو بھی جنگ میں جھونکنے کے لیے(بقیہ نمبر30صفحہ7پر )

جبری بھرتی کا سلسلہ شروع کیا گیا ہے۔حوثیوں نے اپنے زیرتسلط علاقوں میں سابق فوجی اور سول ملازمین کوجنگ کے لیے بھرتی ہونے اور انہیں تنخواہوں کا لالچ دے کر بندوق تھمانے کی کوششیں کی جا رہی ہیں۔حوثیوں کی طرف سے نئی بھرتیوں کے لیے کے لیے کمیٹیاں تشکیل دی گئی ہیں۔

یہ کمیٹیاں ریٹائرڈ سرکاری ملازمین اور سابق فوجی اہلکاروں کو ماہانہ بنیادوں پر تنخواہوں پر بھرتی کر رہی ہیں۔ تنخواہوں کا لالچ دینے کے ساتھ ساتھ باغی دیگر حربوں کے ذریعے بھی شہریوں کو بھرتی کرنے کی سازشیں کر رہے ہیں۔

مزید : ملتان صفحہ آخر