پارلیمنٹ میں علماء کی موجودگی غیر مسلموں کیلئے پریشانی کا باعث ہے :مولانا عطاء الرحمان

پارلیمنٹ میں علماء کی موجودگی غیر مسلموں کیلئے پریشانی کا باعث ہے :مولانا ...

بٹ خیلہ(بیورورپورٹ )جمعیت علماء اسلام کے مرکزی راہنماسنیٹرمولاناعطاء الرحمان نے کہاہے کہ پاکستان کے پارلیمنٹ میں علماء کرام کی موجودگی سے غیرمسلم اوران کے ایجنٹ پریشان ہیں وہ نہیں چاہتے کہ پارلیمنٹ میں علماء کرام موجودہومالاکنڈکے عوام سے اپیل کرتے ہیں کہ وہ یکم اپریل کوپشاورمیں ہونے والے (غلبہ اسلام )کانفرنس میں جوق درجوق شرکت کرکے حکمرانوں پرواضح کریں کہ ہم علماء کرام کے ساتھ ہیں ۔ان خیالات کااظہارمولاناعطاء الرحمان نے گزشتہ روزجمعیت علماء اسلام تحصیل بٹ خیلہ کے زیراہتمام (غلبہ اسلام کانفرنس بہ یادقاری محمدنعیم مرحوم )کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کیا ۔کانفرنس سے ضلعی راہنماصاحبزادہ خالدجان مفتی کفایت اللہ مولاناجاوید لطیف الرحمان اورحافظ سلمان بدرنے بھی خطاب کیا۔انہوں نے کہاکہ جمعیت علماء اسلام خداکی زمین پرخداکانظام چاہتی ہے اوراس کیلئے پرامن جدوجہدکررہی ہے ۔انہوں نے کہاکہ باہرممالک کے پارلیمنٹ میں علماء کرام کی عدم موجودگی کی وجہ سے فحاشی اورعریانی عروج پرہے سعودی عرب میں بھی خواتین کوڈرائیونگ کرنے اورسنیماگھر کھولنے کی اجازت دی گئی ہے جبکہ دبئی میں یورپ ممالک سے بھی زیادہ فحاشی اورعریانی عروج پرہے انہوں نے کہاکہ جب تک پاکستان کے پارلیمنٹ میں جمعیت علماء اسلام کے علماء کرام کی موجودہوں گے کسی کوبھی غیراسلامی بل پاس کرنے کی اجازت نہیں دیں گے ۔انہوں نے کہاکہ عوام بھی ملک سے فحاشی اورعریانی کے خاتمے کیلئے جمعیت علماء کرام کے ساتھ دیجئے اورکارکنان یکم اپریل کوہونے والے غلبہ اسلام کانفرنس میں شامل ہونے کاپیغام گھرگھرتک پہنچائیں۔

مزید : پشاورصفحہ آخر

لائیو ٹی وی نشریات دیکھنے کے لیے ویب سائٹ پر ”لائیو ٹی وی “ کے آپشن یا یہاں کلک کریں۔


loading...