باجوڑ ایجنسی میں لشمینیا ء بیماری سے 12سو افراد متاثر

باجوڑ ایجنسی میں لشمینیا ء بیماری سے 12سو افراد متاثر

باجوڑ ایجنسی (نمائندہ خصوصی)باجوڑ ایجنسی میں لشمینیاء بیماری سے 12 سو افراد متاثر ،بیماری پر کنٹرول لانے کیلئے ویکسین ناپید ۔ علاقے میں ویکسین اور دوائیوں کی فراہمی کیلئے فاٹا ہیلتھ ڈیپارٹمنٹ کو سمری ارسال کی کردی گئی سرجن وزیر صافی ۔باجوڑ ایجنسی کے تحصیل ماموند کے علاقوں گیلی ،ملاکلی ،غونڈی ترخو، لغڑئی ،زری ،ایراب ،گٹ آگرہ ا و دیگر علاقوں میں لشمینیاء بیماری سے 12 سے زائد مرد ،خواتین اور بچے متاثر ہیں ان علاقوں میں ویکسین اور دوائیوں کے عدم دستیابی کیوجہ سے اس مرض میں مبتلا مریضوں میں خوفناک حد تک اضافہ ہو رہا ہے اس سلسلے میں علاقے کے مکینوں حاجی میر سلام ،ملک فضل الرحیم ،اور قاری فضل الرحمان نے بتایا کہ مزکورہ علاقوں میں لشمینیاء بیماری سے سینکڑوں مرد ،بچے اور خواتین متاثر ہو چکے ہیں اور ذیادہ تر لوگ غربت کیوجہ سے اپنا علاج بھی نہیں کراسکتے جبکہ محکمہ صحت نے ابھی تک علاقے میں دوائیوں اور وکسین کا کوئی انتظام نہیں کیا ہے اور علاقے میں موجودغاخی اور لغڑئی کے بی ایچ یوز سمیت ہیڈکوارٹر ہسپتال میں بھی دوائیاں نا پید ہیں جس کیوجہ سے اس مرض کے شدت میں اضافہ ہو رہا ہے جبکہ دوسری طرف سرجن وزیر صافی کا کہنا تھا کہ اگست 2017 سے ہم نے بارہ سو سے زائد بیمار رپورٹ کئے ہیں اور چونکہ اس مرض پر قابو پانے کیلئے ہمارے ساتھ وکسین دستیاب نہیں ہیں اس لئے ہم نے فاٹا ہیلتھ ڈیپارٹمنٹ کو بیماری میں مبتلاء مریضوں کی بائیو ڈاٹا ارسال کئے ہیں جس پر کام جاری ہیں یاد رہے کہ مزکورہ بیماری سینڈ فلائی نامی مچھر کے کاٹنے سے پیدا ہوتی ہیں اور اس بیماری سے تحصیل سلارزئی ،تحصیل ماموند اور چمر کنڈ کے سرحدی علاقوں کے لوگ ذیادہ متاثر ہیں۔

مزید : پشاورصفحہ آخر

لائیو ٹی وی نشریات دیکھنے کے لیے ویب سائٹ پر ”لائیو ٹی وی “ کے آپشن یا یہاں کلک کریں۔


loading...