خواجہ آصف پر سیاہی پھینکنے والے آدمی کے ساتھ اس کے بعد کیا کیا گیا؟ ایسی ویڈیو سامنے آگئی کہ آئندہ کوئی بھی ایسا کرنے سے پہلے بار بار سوچے گا

خواجہ آصف پر سیاہی پھینکنے والے آدمی کے ساتھ اس کے بعد کیا کیا گیا؟ ایسی ...
خواجہ آصف پر سیاہی پھینکنے والے آدمی کے ساتھ اس کے بعد کیا کیا گیا؟ ایسی ویڈیو سامنے آگئی کہ آئندہ کوئی بھی ایسا کرنے سے پہلے بار بار سوچے گا

  

سیالکوٹ (ڈیلی پاکستان آن لائن) وزیر کارجہ خواجہ آصف پر سیاہی پھینکنے والے نوجوان کی پہلے تو لیگی کارکنوں نے خوب دھلائی کی جس کے بعد اسے پولیس کے حوالے کردیا۔ سوشل میڈیا پر سامنے آنے والی ویڈیو میں خواجہ آصف پر سیاہی پھینکنے والے نوجوان کی درگت بنتے دیکھی جاسکتی ہے۔

تفصیلات کے مطابق ہفتہ اور اتوار کی درمیانی شب مسلم لیگ ن کے ورکرز کنونشن کے دوران خواجہ آصف تقریر کر رہے تھے کہ اسی دوران ایک نوجوان نے ان کے چہرے پر سیاہی پھینک دی۔ سیاہی خواجہ آصف کے چہرے اور بالوں پر گری جبکہ ان کے کپڑے بھی خراب ہوگئے، قریب کھڑے کئی کارکنان بھی اس سیاہی سے متاثر ہوئے۔

خواجہ آصف پر سیاہی کس نے اور کیوں پھینکی؟ تمام تفصیلات سامنے آگئیں، جان کر ہر کوئی حیران پریشان رہ گیا کیونکہ نوجوان کا تعلق پی ٹی آئی یا ن لیگ سے نہیں ہے بلکہ ۔۔۔

ویڈیو میں دیکھا جاسکتا ہے کہ لیگی کارکن کس طرح سے اس نوجوان کو تشدد کا نشانہ بنا رہے ہیں جبکہ بعض لوگ اس دوران ملزم کو مغلظات سے بھی نواز رہے ہیں۔ خواجہ آصف کی جانب سے واقعہ پیش آنے کے بعد کہا گیا کہ ان کی نوجوان سے کوئی دشمنی نہیں ہے اس لیے اسے چھوڑ دیا جائے تاہم ملزم تاحال پولیس کی حراست میں ہے اور اس پر کوئی مقدمہ بھی درج نہیں کیا گیا۔

بھرے جلسے میں نوجوان نے خواجہ آصف کا ’منہ کالا کردیا‘ 

خواجہ آصف پر سیاہی پھینکنے والے شخص کے بارے میں انکشاف ہوا ہے کہ وہ مبینہ طور پر تحریک لبیک کا کارکن ہے اور اس نے ختم نبوت ﷺ حلف نامے میں تبدیلی کے معاملے پر وزیر خارجہ پر سیاہی پھینکی ۔ خواجہ آصف پر سیاہی پھینکنے والے نوجوان کا نام فیض الرسول بتایا جاتا ہے جو کہ سیالکوٹ کے قریب سرحدی علاقے مظفر پور کا رہائشی ہے۔

ویڈیوز دیکھیں

مزید : اہم خبریں /قومی /سیاست /علاقائی /پنجاب /سیالکوٹ