روہنگیا مسلمانوں پر بد ترین تشدد کا آغاز کروانے والا شخص کون ہے اور اب کہاں پر ہے؟ جواب ایسا کہ کوئی مسلمان تصور بھی نہ کرسکتا تھا

روہنگیا مسلمانوں پر بد ترین تشدد کا آغاز کروانے والا شخص کون ہے اور اب کہاں ...
روہنگیا مسلمانوں پر بد ترین تشدد کا آغاز کروانے والا شخص کون ہے اور اب کہاں پر ہے؟ جواب ایسا کہ کوئی مسلمان تصور بھی نہ کرسکتا تھا

  



ینگون(مانیٹرنگ ڈیسک)میانمار میں روہنگیا مسلمانوں پر ہونے والے مظالم کے بارے میں تو ہم آگاہ ہیں لیکن بہت سے لوگ یہ نہیں جانتے ہوں گے کہ مسلمانوں پر اس بدترین تشدد کا آغاز کروانے والا شخص ویراتھو نامی بدھ راہب تھا جسے مسلمانوں کے خلاف زہرفشانی کرنے اور لوگوں کو ان کی قتل و غارت گری پر اکسانے کی وجہ سے ’بدھ متوں کا بن لادن‘ بھی کہا جاتا ہے۔ ویب سائٹ dw.com کی رپورٹ کے مطابق ویراتھو کے ساتھ ایک اور انتہائی کٹر بدھ راہب بھی اس کام میں شامل تھا جسے اس کے جرائم کی پاداش میں جیل میں ڈال دیا گیا جبکہ ویراتھو کے ’تبلیغ‘ کرنے پر ایک سال کے لیے پابندی عائد کر دی گئی تھی۔ یہ پابندی سینئر بدھ راہبوں کی کونسل نے اسے مذہبی منافرت پھیلانے کا مرتکب قرار دے کر لگائی تھی۔ اب وہ پابندی ختم ہو گئی ہے اورویراتھو ایک بار پھر منظرعام پر آ گیا ہے۔

منظرعام پر آنے کے بعد ویراتھو نے پھر زہراگلنا شروع کر دیا ہے اورکہا ہے کہ ”میری اسلام اور مسلمان مخالف تقاریر کا مسلمانوں پر ہونے والے تشدد سے کوئی تعلق نہیں۔“ اس نے میانمار کی ریاست راکھین کے روہنگیا مسلمانوں کو بنگالی قرار دیتے ہوئے کہا کہ ”اس تشدد کی وجہ بنگالیوں کی دہشت گردی ہے۔“ واضح رہے کہ ویراتھو میانمار کے وسطی شہر منڈالے (Mandalay)کا رہنے والا ہے۔ اس کی تقاریر کی وجہ سے 2014ءمیں منڈالے میں بھی شدید مسلم مخالف ہنگامے پھٹے تھے جن میں سینکڑوں مسلمانوں کو موت کے گھاٹ اتار دیا گیا تھا۔

مزید : بین الاقوامی