ہندوستان کو خوش کرنے کیلئے مدارس پرقبضہ شرمناک ‘ پیر عزیز الرحمن

ہندوستان کو خوش کرنے کیلئے مدارس پرقبضہ شرمناک ‘ پیر عزیز الرحمن

ملتان، شجاع آباد (سپیشل رپورٹر، نامہ نگار) دینی مدارس اور علماء کرام وطن کی محبت سے سرشار ہمہ وقت ملکی دفاع کے لیے پاک فوج کے ساتھ ہیں۔ اسلام کی عظمت اور پاکستان کے دفاع کے لیے تن من دھن قربان کردیں گے ،دنیا کی کوئی طاقت ہمیں کلمۂ حق کہنے سے نہیں روک سکتی۔ ان (بقیہ نمبر36صفحہ12پر )

خیالات کا اظہار وفاق المدارس العربیہ پاکستان کی مجلس عاملہ کے رکن اور روحانی پیشوا مولانا پیر عزیزالرحمن ہزاروی نے ’’جامعہ فاروقیہ شجاع آباد‘‘ میں سالانہ اجتماع برموقع ختم قرآن کریم وختم صحیح بخاری شریف ودستار بندی سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ انہوں نے کہا کہ حکمران قرآن کے خادمین کو تنگ کرکے عذاب الٰہی کو دعوت نہ دیں۔ علماء کے ساتھ دشمنوں جیسا رویہ شرمناک ہے۔ اجتماع سے خطاب کرتے ہوئے جامعہ کے مہتمم و شیخ الحدیث ،ناظم وفاق المدارس العربیہ پاکستان جنوبی پنجاب مولانا زبیراحمد صدیقیؔ نے کہا کہ امام بخاریؒ نے اخلاص و تقوی کے ساتھ خدمت دین میں عمر صرف کی وقت کے حکمرانوں نے امام بخاری پرمظالم ڈھائے، انہیں ان کے شہر سے نکال دیا ،دوسرے شہروں میں ان کے داخلے پر پابندی لگائی گئی، امام بخاریؒ نے صبر و عزیمت کے دامن کو ہاتھ سے نہیں جانے دیا، ان ظالم حکمرانوں کو آج کوئی نہیں جانتا، جبکہ امام بخاری کا نام زندہ ہے ۔ انہوں نے کہا کہ ظالم حکمران علماء پر مظالم بند کریں ،فورتھ شیڈول کے نام پر علماء کے شہری حقوق سلب کئے جارہے ہیں، ان کے شناختی کارڈ ،پاسپورٹ اور اکاؤنٹس بند کیے جارہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ ہندوستان کوخوش کرنے کے لیے دینی مدارس پر حکومتی قبضہ شرمناک بھی ہے اور تشویش ناک بھی۔ انہوں نے کہا کہ دینی مدارس کے دفاع کے لیے پوری قوم متحد ہے، حکومت دینی مدارس نہیں چلاسکتی۔ انہوں نے کہا کہ مدارس پر رجسٹریشن کی پابندی ختم کی جائے، کوائف طلبی کے نام پر دراندازی کا کوئی جواز نہیں۔ قربانی کی کھالوں کی بندش سے مدارس کے وسائل سلب کیے جارہے ہیں۔ اجتماع سے وفاق المدارس العربیہ پاکستان کی مجلس عاملہ کے رکن مولانا ارشاد احمد نے خطاب کرتے ہوئے قرآن و حدیث سے وابستہ لوگوں کو دنیا کا بہترین انسان قرار دیا، اجتماع سے شیخ الحدیث مولانا محمد نواز، شیخ الحدیث مولانا منیراحمد منور، شیخ الحدیث مولانا محمد عمر قریشی،استاذ الحدیث مفتی محمد عبداللہ ، شیخ الحدیث مولانا محمد میاں، مولانا محمد عمیر صدیقیؔ ،مولانا عزیز اللہ اور مولانا محمد احمد پونٹوی نے بھی خطاب کیا۔ اس موقع پر 23علماء وعالمات، 60حفاظ و حافظات کو آخری سبق پڑھانے کے علاوہ دستار بندی ودوپٹہ پوشی بھی کرائی گئی۔ دستار بندی کے لیے جانشین امام الہدیٰ مولانا محمد اجمل قادری نے خصوصی طور پر شرکت کی، شیوخ الحدیث کے علاوہ مولاناقاری ظفرمحمود،جامعہ کے اساتذۃ الحدیث مولانامحمداسلم،مولانااحسان الحق، مولانامحمدبلال جلویؔ ،مولانامحمدرب نوازاورمولاناریاض احمد نے بھی دستاربندی میں حصہ لیا۔اجتماع میں ہر طبقہ فکر کے ہزاروں افراد نے شرکت کی۔ اس موقع پر جامعہ کے فاضل مولانا محمد ہارون خان کووفاق المدارس العربیہ پاکستان کے امتحان میں پنجاب بھر میں اول پوزیشن حاصل کرنے پر عمرے کا ٹکٹ اور کتابیں انعام میں پیش کی گئیں۔

مزید : ملتان صفحہ آخر