اچھی پراڈکٹ کی کاپی ‘ ملک بھرمیں جعلساز مافیا متحرک ‘ بچوں کی صحت تباہ

اچھی پراڈکٹ کی کاپی ‘ ملک بھرمیں جعلساز مافیا متحرک ‘ بچوں کی صحت تباہ

ملتان(نیوز رپورٹر) معروف صنعتکار اور وولکا انٹرنیشنل و ایس ایم فوڈز کے چیئرمین چوہدری ذوالفقار علی انجم نے کہا ہے کہ1985ء4 میں ایک فیکٹری میں کام کے دروانNICE بسکٹ بنانے پر وہاں کام کرنے والے انگریز نے مجھے بسکٹ مین کا خطاب دیا جس سے مجھے بہت حوصلہ ملا اور اللہ کا نام لے کر اس صنعت میں قدم رکھ دیا ان خیالات کا اظہار انہوں نے ڈسٹری بیوٹرز سیلز گالا میں(بقیہ نمبر40صفحہ12پر )

خطاب کرتے ہوئے کیا چوہدری ذوالفقار علی انجم کا مزید کہنا تھا کہ آئندہ چند روز تک 3D سٹرابری جیلی لانچ کررہے ہیں جس کی مشینری یورپ سے منگوائی گئی ہے چند روز میں پلانٹ چالو کردیا جائے گا 3D سٹرابری جیلی پہلے صرف انڈیا اور اٹلی میں بنائی جاتی ہے ہم پہلی مرتبہ اسے پاکستان میں تیار کررہے ہیں اس پراڈکٹ کو کاپی کرنا بھی ناممکن ہے ہمارے ملک میں سب سے بڑا مسئلہ جعلساز مافیا ہے جو راتوں رات اچھی چیزوں کی کاپی کرکے مارکیٹ میں لے آتے ہیں اور لوگ ایسی غیر معیاری چیزیں کھا کر بیماریوں میں مبتلا ہوجاتے ہیں ہماری پراڈکٹس میں کوئی ایسا میٹریل نہیں ڈالا جاتا جس سے بچے بیمار ہوں یا ان کی صحت پر کوئی برا اثرپڑے وہی چیز بناتے ہیں جو پہلے ہم کھائیں چوہدری ذوالفقار علی انجم کا مزید کہنا تھا کہ سال 2000ء4 میں گبز کمپنی کا آغاز کیا اور اپنے کام میں جدت لانے کے لئے اب تک تین مرتبہ مشینری تبدیل کرچکا ہوں اللہ کے کرم اور ڈسٹری بیوٹرز و ہول سیلرز کی محنت سے کاروبار میں روز بروز بہتری آرہی ہے کئی مرتبہ مارکیٹ کی ڈیمانڈ پوری کرنا مشکل ہوجاتا ہے نئی نئی پراڈکٹس متعارف کرانے کی وجہ سے بہت اچھا رسپانس آرہا ہے ہم فوڈ قوانین کے مطابق کام کرتے ہیں جس کی وجہ سے آج تک کبھی شرمندگی کا سامنا نہیں کرنا پڑا ‘ملکی حالات کے حوالے سے گفتگو کرتے ہوئے ان کا کہنا تھا کہ اللہ کے نبی? نے جنگ سے پناہ مانگی مگر یہ بھی کہا کہ اگر جنگ تمہارے اوپر مسلط کردی جائے تو سپہ سالار بن جاؤ ‘اللہ کی مدد ہمارے ساتھ ہے بھارت کے خلاف جنگ میں کامیابی ملے گی اس موقع پر ڈسٹری بیوٹرز‘ ہول سیلرز کی بڑی تعداد موجود تھی۔

تباہ

مزید : ملتان صفحہ آخر