بھارت کے ساتھ کشیدگی کے باعث سٹاک مارکیٹ پر منفی اثرات مرتب

بھارت کے ساتھ کشیدگی کے باعث سٹاک مارکیٹ پر منفی اثرات مرتب

لاہور(افضل افتخار)پاکستان اور بھارت کے درمیان ہونے والی کشیدگی کے باعث پاکستان سٹاک مارکیٹ میں بھی منفی اثرات مرتب ہورہے ہیں جس کی وجہ سے شدید نقصان کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے گزشتہ ہفتہ مجموعی طور پر مارکیٹ کو مندی کاسامنا کرنا پڑا انڈیکس پانچ سو پوائنٹس کم ہوگیا جبکہ 39 ہزار پوائنٹس کی نفسیاتی حد تک پہنچ گئی جبکہ مارکیٹ سرمایہ کاروں کے 98 ارب روپے بھی اس سے ڈوب گئے اور سرمایہ کا مجموعی حجم اسی کھرب روپے سے کم ہوکر 79 کھرب روپے کی سطح پر آگیا ہے جبکہ پاکستان سٹاک مارکیٹ میں گزشتہ ہفتہ مجموعی طور پر 1723 کمپنیوں کا کاروبار ہوا جس میں سے665 کمپنیو ں کے حصص کی قیمتوں میں اضافہ ہوا جبکہ 940 کے حصص میں کمی جبکہ 118 کمپنیوں کے حصص کی قیمتوں میں استحکام دیکھا گیا جو شدید نقصان کی نشاندہی ہے اس حوالے سے ماہرین کا کہنا ہے کہ اگر یہ سلسلہ اسی طرح سے چلتا رہا تو پاکستان سٹاک مارکیٹ کو مزید نقصان برداشت کرنا پڑے گا جس سے ملکی معشیت پر منفی اثرات مرتب ہوں گے اور اس وقت کی ضرورت یہ ہے کہ پاک بھارت تعلقات بہتر ہو تاکہ ملک میں ایسی صورتحال کا سامنا نہ کرنا پڑے کیونکہ پاکستان سٹاک مارکیٹ کی بہتری سے ملکی معیشیت پر اچھے اثرات مرتب ہوتے ہیں اسی طرح سے اگر مارکیٹ نقصان کا شکار ہو تو اس سے پاکستان معیشت پر منفی اثرات پڑتے ہیں امید ہے کہ مستقبل میں پاکستان اور بھارت کے درمیان تعلقات بہتر ہوں گے تاکہ اس وقت جس صورتحال کا سامنا ہے اس سے باہرنکلنے میں مدد ملے گی اور یہ وقت کی اہم ضرورت بھی ہے ۔

مزید : کامرس