آٹا و گندم بر آمد کنند گان کے ریفنذز فوری ادا کئے جائیں ، فلور ملز ایسوسی ایشن

آٹا و گندم بر آمد کنند گان کے ریفنذز فوری ادا کئے جائیں ، فلور ملز ایسوسی ایشن

لاہور(نیوزرپورٹر) پاکستان فلور ملز ایسوسی ایشن (پنجاب) کے سابق چےئرمین میاں ریاض احمد اور چوہدری افتخار احمد مٹو نے کہا ہے کہ آٹا و گندم کے ایکسپورٹرکو ریبیٹ کی ادائیگیوں میں مسلسل تاخیر کے باعث فلور ملز مالکان شدید دباؤ کا شکار ہیں، وزیر اعظم پاکستان عمران خان اور وزیر اعلی پنجاب عثمان بزدار خصوصی دلچسپی لے کر ریبیٹ کی رقم کی ادائیگیاں کروائیں ،گندم / آٹا کے ایکسپورٹر لاکھوں ٹن گندم ایکسپورٹ کر چکے ہیں تا حال انہیں ریبیٹ کی رقم میں سے ایک پائی تک نہیں مل سکی ۔ یہ بات انہوں نے گزشتہ روز اپنے ایک مشترکہ بیان میں کہی۔ پی ایف ایم اے (پنجاب) کے رہنماؤں نے کہا کہ گندم کی نئی فصل آنے والی ہے ،جبکہ آٹا و گندم ایکسپورٹرز کو ابھی تک سابقہ ریفنڈز کی ادائیگی نہیں کی گئی جس کی وجہ سے وہ شدید مالی مشکلات سے دوچار ہیں اور نئی گندم کی فصل کی خریداری میں بھی اپنا حصہ ڈالنے سے قاصر ہو چکے ہیں۔ ،میاں ریاض اور چوہدری افتخار احمد مٹو نے کہا کہ حکومت کو چاہیے کہ وہ نئی فصل آنے سے قبل آٹا و گندم کے ایکسپورٹرز کے پھنسے ہوئے ریفنڈز کی رقم کی ادائیگیاں یقینی بنائیں ،انہوں نے کہاکہ حکومت کو فاضل گندم کی ایکسپورٹ کے لئے بھی لانگ ٹرم ٹریڈ پالیسی کا اعلان کرنا چاہیے تاکہ لاکھوں ٹن فاضل گندم کو خراب ہونے سے بچایا جاسکے اور زمینی و سمندر راستے درینہ مارکیٹ افغانستان گندم کی مصنوعات کی ایکسپورٹ کر کے ملک کے لئے قیمتی زرمبادلہ کمایا جا سکے۔ انہوں نے کہاکہ گندم کی مصنوعات کی ایکسپورٹ سے زرمبالہ بھی زیادہ آئے گا اور مقامی انڈسٹری کا پہیہ بھی چل سکے گا جس سے مقامی لوگوں کو روزگار کے مواقعے بھی میسر آئیں گے ۔اس کیلئے حکومت کو چاہیے کہ وہ گندم کے ایکسپورٹرز کو ریبیٹ کی رقم کی ادائیگی یقینی بنائے تاکہ ایکسپورٹرز اور حکومت کے درمیان اعتماد سازی پیدا ہو سکے۔

مزید : کامرس