مغرب نوا طبقے کا نزلہ ہمیشہ مدارس پر گرتا ہے : مولانا انوار الحسن

مغرب نوا طبقے کا نزلہ ہمیشہ مدارس پر گرتا ہے : مولانا انوار الحسن

نوشہرہ(بیورورپورٹ) دارالعلوم حقانیہ کے مہتمم مولانا انوا ر الحق نے کہاکہ مغرب اور مغرب نواز طبقے کا نزلہ ہمیشہ دینی مدارس پر گرتا ہے اور وہ انہیں دہشت گردی میں ملوث کرنے کا بے بنیاد پروپیگنڈہ جاری رکھے ہوئے ہیں جبکہ یہ مدارس ملک کے سب سے بڑے این جی اووز ہیں جو فلاحی اداروں کے طورپر لاکھوں نوجوانوں اور بچوں کی مفت تعلیم و تربیت اور ضروریات کا اہتمام کررہے ہیں، دشمنان اسلام اور مغربی طاقتیں ختم نبوت اور توہین رسالت سے متعلق آئینی رکاوٹوں کو ختم کرنے پر تلی ہوئی ہیں۔مغرب اسلام دشمن قوتیں امت مسلمہ کے تشخص اور تہذیب اسلامی کا سرچشمہ دینی مدارس ہی کو سمجھتی ہیں۔ اس لئے ان کا ایجنڈا پاکستان کے دینی تعلیم اور تربیت کے ان مراکز کو بدنام کرانا اور مسلمانوں کا اعتماد ان اداروں سے توڑنا ہے جبکہ موجودہ دباؤ اسی کا نتیجہ ہے۔ مولانا انوار الحق یہاں دارالعلوم حقانیہ کے سالانہ مجلس شوریٰ کے اجلاس سے خطاب کررہے تھے‘ جس میں ملک بھر سے دارالعلوم کے شوریٰ کے اراکین نے شرکت کی۔ مولانا انوار الحق نے اجلاس میں دارالعلوم حقانیہ کے لئے سالانہ بجٹ پیش کیا اور اس کی منظوری لی‘ بجٹ میں دارالعلوم کے سالانہ آمد وخرچ اور تمام شعبوں کی کارکردگی پیش کی گئی‘ جمعیت علماء اسلام کے سربراہ اور دفاع پاکستان کونسل کے چیئرمین اور جامعہ حقانیہ کے نائب مہتمم مولاناحامد الحق حقانی نے دارالعلوم کی زیرتعمیر جامع مسجد مولانا عبدالحق ؒ کی تعمیر پر بھی بریفنگ دی اورکہاکہ اسلام کے قلعے پاکستان کی حفاظت دینی مدارس اور علماء طلباء نے بڑھ چڑھ کر کرنی ہے،انہوں نے کالعدم جماعتوں کے نام پر حالیہ حکومتی اقدامات کی بھی مذمت کی۔اجلاس کے اختتام میں وفات پانے والے دارالعلوم کے معاونین و مخلصین بالخصوص ناظم دارالعلوم وبرادرم شہید ناموس رسالت مولانا سمیع الحقؒ ، الحاج اظہار الحق کے رفع درجات کے لئے دعائیں کی گئیں۔اجلاس سے مولانا حامد الحق حقانی اور اہم ارکان مجلس شوریٰ نے بھی خطاب کیا اور دارالعلوم کی تعمیر و ترقی کے لئے مفید تجاویز دیں۔

مزید : پشاورصفحہ آخر