بہاولنگر:محکمہ تعلیم میں 200سے زائد تقرریاں 5ملزموں کی ضمانت بعدازگرفتاری منظور

بہاولنگر:محکمہ تعلیم میں 200سے زائد تقرریاں 5ملزموں کی ضمانت بعدازگرفتاری ...

  

ملتان (سپیشل رپورٹر) ہائیکورٹ ملتان ڈویڑن بنچ نے بہاولنگر کے محکمہ تعلیم میں افسران کی ملی بھگت سے 200 سے (بقیہ نمبر26صفحہ12پر)

زائد تقرریاں کر کے قومی خزانے کو نقصان پہنچانے کے مقدمہ میں ملوث پانچ ملزمان کی ضمانت بعد از گرفتاری منظور کرتے ہوئے رہائی کا حکم دیا ہے۔ فاضل عدالت میں اسسٹنٹ اکاؤنٹس آفیسر عبدالستار فاروقی، جونئیرکلرک شفیق اطہر، جاویداقبال نصراللہ اور ایاز احمد نے درخواست ضمانت بعد از گرفتاری دائر کرتے ہوئے موقف اختیار کیا تھا کہ نیب نے 323 ملزمان کے خلاف چالان کیا ہے جبکہ بھرتیاں کرکے قومی خزانے کو نقصان پہنچانے کا جواز ہی نہیں پیدا ہوتا کیونکہ وہ اس کے اہل ہی نہیں اور اس مقدمہ میں متعدد ملزمان پہلے ہی ضمانت لے چکے ہیں اور وہ ڈیڑھ سال سے جیل میں قید کاٹ رہے ہیں محکمہ تعلیم کے افسران نے اپنی جان بچانے کے لیے 74 ملازمین کو برطرف بھی کیا۔فاضل عدالت نے ملزمان اور نیب کے وکلا کے دلائل سننے کے بعد ضمانت بعد از گرفتاری منظور کرنے کا حکم دیا ہے۔ ملی بھگت سے کی گئی بھرتیوں میں ٹیچر، مالی، چوکیدار اور درجہ چہارم کے ملازمین شامل تھے۔

منظور

مزید :

ملتان صفحہ آخر -