دوخواتین قتل، ملتان سمیت مختلف شہروں میں حادثے،7افراد جاں بحق

دوخواتین قتل، ملتان سمیت مختلف شہروں میں حادثے،7افراد جاں بحق

  

ملتان، ہیڈ پنجند، راجن پور،میلسی،دوکوٹہ، وہاڑی(سپیشل رپورٹر، نمائندہ پاکستان، ڈسٹرکٹ رپورٹر، نامہ نگار، بیورورپورٹ)بستی ملوک پولیس نے لڑکی کو اغوا کرنے کے الزام میں د و افراد کے خلاف مقدمہ درج کر لیا ہے محبوب احمد نے بستی ملوک پولیس کو درخواست (بقیہ نمبر48صفحہ7پر)

دی کہ ملزمان نواز اور ساجد اس کے گھر میں داخل ہوئے اوراس کی بیٹی اغوا کر لیا اور فرار ہوگئے۔جبکہ سمیجہ آباد میں چھت گرنے سے ماں دو بچوں سمیت جاں بحق ہوگئی پیراں غائب روڈ پر شکیل احمد کے گھر کی چھت گر گئی بتایا جاتاہے کہ چھت بوسیدہ تھی اور گزشتہ دنوں ہونے والی بارش کی وجہ سے اسے مزید نقصان پہنچا تھا مرمت کے دوران چھت گر گئی جس سے شکیل کی بیگم انعم، بیٹا ایان اور بیٹی انیحہ ملبہ کے نیچے دب گئیں ریسکیو 1122 نے علاقے کے لوگوں کی مدد سے انہیں باہر نکالا اور تشویشناک حالت میں انہیں نشتر ہسپتال میں داخل کروایا جہاں پر انعم اور اس کے دونوں بچے جاں بحق ہوگئے انعم کی عمر 26 سال، ایان سات سال اور انیحہ کی عمر تین سال تھی سیتل ماڑی پولیس نے چھت گرنے کے واقع کی تحقیقات شروع کر دی ہیں۔ بستی کانجن والی علی پور کی رہائشی شمسہ کنول نے خودکو رسی سے لٹکاکر خودکشی کرلی۔پولیس تھانہ سٹی علی پورنے لاش پوسٹمارٹم کیلئے THQعلی پور پہنچادی۔صحافیوں سے گفتگوکرتے ہوئے لڑکی کی والدہ زاہدہ پروین نے بتایا کہ میرے داماسجادحسین اوراُس کے بھتیجے عدنان نے پہلے مجھے بتایا کہ شمسہ کی موت کرنٹ لگنے سے ہوئی ہے جب میں موقع پر پہنچی تو شمسہ کنول کی ساس بھیراں مائی نے بتایا کہ شمسہ کنول نے خود کو رسی سے لٹکاکرخودکشی کی ہے۔متضاد بیانات پرمجھے قوی شک ہے کہ شمسہ کنول کے شوہرسجادحسین،عدنان اور ساس بھیراں مائی نے صلاح مشورہ ہوکر میری بیٹی شمسہ کنول کو قتل کیا ہے۔ شمسہ کنول کی ساس بھیراں مائی نے بتایا کہ جب صبح6بجے ہم سب گھر کھڑاک کی آواز پر بیدارہوئے تودیکھا کہ شمسہ کنول نے خود کو رسی سے لٹکایاہواتھا جسے ہم نے مردہ حالت میں نیچے اتارا۔رابطہ کرنے پر پولیس تھانہ سٹی علی پور نے بتایا کہ لاش کو پوسٹمارٹم کیلئے ٹی ایچ کیو منتقل کردیاہے تاہم پوسٹمارٹم کی رپورٹ کی روشنی میں میرٹ پر کاروائی ہوگی۔راجن پور،نواحی علاقے رکھ قادرہ میں غیرشادی شدہ خاتون نے زہریلی سپرے پی کر زندگی کا خاتمہ کرلیا،پولیس تھا نہ عمرکوٹ نے جائے وقوعہ پر پہنچ کر لاش قبضہ میں لے کر پوسٹ مارٹم کیلئے تحصیل ہیڈ کوآرٹر ہسپتال روجہان منتقل کردیا ہے۔ میلسی کے نواحی گاؤں علاقہ فتح پور کی نسرین مائی جو کہ مزدوری کے سلسلے میں اپنے شوہر محمد اقبال کے ساتھ کراچی گئی ہوئی تھی جو کہ قیوم آباد کراچی رہائش پذیر تھی۔اچانک محمد اقبال کی کال آئی کہ نسرین فوت ہو گئی ہے میں نسرین مائی کی میت لیکرپہنچ رہا ہوں فتح پور پہنچنے کے بعد اہل علاقہ نے نسرین کے گلے پر نشان اور دوسرے جسم پر نشان دیکھے تو 15 پر کال کی تو پولیس نے دفنانے سے پہلے ہی لاش قبضے میں لیکر پوسٹ مارٹم کے لیے ہسپتال پہنچا ئی مقتولہ کے بھائی غلام عباس اور ورثاء نے بتایا کہ نسرین مائی کو قتل کیا گیا ہے ہمیں انصاف فراہم کیا جائے پولیس تھانہ صدر میلسی نے پوسٹمارٹم کے بعد لاش ورثاء کے حوالے کر دی ہے۔راولپنڈی سے سکردو جانے والے بد قسمت کوسٹر جو کہ گذشتہ روز حادثے کا شکار ہو گئی تھی اس میں دوکوٹہ کے نواحی موضع لالو کا چوہدری محمد مقبول جٹ جو چھٹیاں گزار کو تین دن قبل ہی واپس گیا تھا اور نجی کمپنی میں ملازم تھا وہ بھی سکردو ڈیوٹی پر جا رہا تھا کہ موت نے آ ن لیا حادثے کے بعد اس کی نعش نہیں مل رہی تھی پاک فوج کے جوانوں نے 36گھنٹوں بعد نعش ڈھونڈ لی ہے ورثاء کی جانب سے میت کو آبائی گاؤں لانے کیلئے اقدامات کیے جا رہے ہیں۔ وہاڑی کینواحی علاقہ چک 555 ای بی میں مکان کی چھت گرگئی گھرکے پانچوں افرادزخمی ہوگئے واقعات کے مطابق گزشتہ تین دن کی مسلسل موسلادھاربارش کی وجہ سے مکان کی چھت کمزورہوگئی جو علی الصبح اس وقت گرگئی جب اہل خانہ مکان کے اندرسوئے ہوئے تھے مکان کی چھت گرنے سے گھرکے پانچوں افرادزخمی ہوگئے جن میں سے دوبہن بھائی جن کی عمریں 8سال اور12سال کے درمیان ہیں اوران کی والدہ شدیدزخمی ہوگئے ہیں ریسکیو1122کی ٹیم نے مکان کی چھت کے ملبہ کے نیچے سے زخمیوں نکالاجن میں سے دوزخمیوں کوموقع پرطبی امداددی گئی جبکہ شدیدزخمیوں میں گھرکے مالک محمدجہانگیرعمر40سال نبیلہ زوجہ جہانگیرعمر35سال عائشہ دختر جہانگیرعمر14سال فیضان ولد جہانگیرعمر12سال آمنہ دختر جہانگیرعمر8سال کوڈی ایچ کیوہسپتال شفٹ کردیاگیاہے جہاں زخمیوں کا علاج ومعالجہ جاری ہے۔

مزید :

ملتان صفحہ آخر -