کبڈی فٖٖیڈریشن کا ملک میں پی ایس ایل کی طرز پر کبڈی لیگ کرانے کا اعلان

کبڈی فٖٖیڈریشن کا ملک میں پی ایس ایل کی طرز پر کبڈی لیگ کرانے کا اعلان

  

لاہور (جاویداقبال،تصاویر ذیشان منیر) پاکستان کبڈی فیڈریشن کے عہدے داروں نے اعلان کیا ہے کہ پی ایس ایل کی طرز پر پاکستان میں پاکستان کبڈی لیگ کرائی جائیگی جس کی تیاریاں شروع کردی گئی ہیں اور رابطے کیے جارہے ہیں۔اس امر کا اظہار پاکستان کبڈی فیڈریشن کے سیکرٹری فنانس اختر عباس خواجہ اور جوائنٹ سیکریٹری رائے مسعود کھرل نے پاکستان فورم میں اظہار خیال کرتے ہوئے کیا۔انہوں نے کہا کہ پی ایس ایل کے بعد ورلڈ کبڈی لیگ پاکستان کا سب سے بڑا ایونٹ بن کر سامنے آئے گا۔کوشش کر رہے ہیں کہ اس ایونٹ میں کم و بیش 30 سے زائد ممالک کے کھلاڑی شرکت کریں۔ دس ممالک کے کھلاڑیوں سے رابطے ہوچکے ہیں۔ورلڈ کبڈی لیگ کو سپانسر کرنے والی کمپنیوں سے بھی رابطے ہو رہے ہیں۔اس بڑے ایونٹ کو منعقد کرانے کے لئے حکومت پاکستان اور خصوصاً وزیراعظم پاکستان سرپرستی کریں۔اختر عباس خواجہ نے کہا کہ دنیا کی تاریخ گواہ ہے کہ پاکستان کبڈی فیڈریشن نے کبڈی کا عالمی کپ پاکستان میں ایسے وقت میں منعقد کروایا جب بنگلہ دیش جیسی کرکٹ ٹیم پاکستان آنے کے لیے تیار نا تھی اوردنیا نے دیکھا کہ ہم نے پاکستان کے روائتی حریف بھارت کو فائنل میں شکست دی اور عالمی کپ اپنے نام کر کے پاکستان کبڈی فیڈریشن کے بانی چوہدری ظہور الہٰی اور علی محمد خواجہ کا خواب پورا کیا۔ہم وزیر اعظم پاکستان سے امید رکھتے ہیں کہ وہ اس کھیل کی مناسب سر پرستی کریں اور بھارت کو شکست دینے والی کبڈی ٹیم کو حوصلہ افزائی کرتے ہوئے ان کو انعام و اکرام سے نوازیں تا کہ یہ کھلاڑی کھیت اور کھلیان کرنے کے ساتھ اس کھیل میں بھی مزید کامیابی حاصل کر سکیں۔رائے مسعود کھرل نے کہا کہ موجودہ دور میں کھیل کھلیان کے کھیل کبڈی کو گراؤنڈ میں منتقل کرنے کا کریڈٹ چوہدری شجاعت حسین،پرویز الہٰی کے بعد فیڈریشن کے صدر چوہدری شافع حسین اور جنرل سیکرٹری رانا محمد سرور کو بھی جاتا ہے۔اب ہم نے فیصلہ کیا ہے کہ اس ایونٹ کو پی ایس ایل کی طرز پر بہت جلد اپنے ملک میں کروائیں اور ورلڈ کبڈی لیگ کواس ملک کے مختلف شہروں میں منعقد کریں جس میں دنیا بھر کے کھلاڑی شرکت کریں گے۔ سپورٹس کو عام کرنے کے لیے پنجاب اور حکومت پاکستان کو مل کر اقدامات کرنے ہونگے۔کالج اور یونیورسٹی کی سطح سے اچھے کھلاڑی نکالنے ہوں گے۔ماضی کی طرز پر طلباء کے داخلے کرنا ہو نگے،سرکاری محکموں میں کھلاڑیوں کو ملازمت دینا ہو گی۔انہوں نے کہا کہ مستقبل قریب میں خواتین کبڈی کے ایونٹ بھی منعقد کئے جائیں گے اور کبڈی کو ملک کے کونے کونے میں پہنچا کے دم لیں گے۔

کبڈی لیگ

مزید :

صفحہ آخر -رائے -