سندھ ہائیکورٹ کا شادی ہال گرانے پر حکم امتناع جاری کرنے سے انکار

سندھ ہائیکورٹ کا شادی ہال گرانے پر حکم امتناع جاری کرنے سے انکار

  

کراچی(آئی این پی) سندھ ہائی کورٹ نے ملیر میں شادی ہال گرانے پر حکم امتناع جاری کرنے سے انکار کردیا اور سینئر ممبر بورڈ آف ریونیو اور ڈی جی ایس بی سی اے، ڈپٹی کمشنر ملیر، مختیار کار ملیر، ایڈووکیٹ جنرل سندھ کو نوٹس جاری کر دیے۔ تفصیلات کے مطابق سندھ ہائی کورٹ میں غیر قانونی تعمیرات کے خلاف آپریشن سیمتعلق درخواستوں کی سماعت ہوئی، عدالت نے ملیر میں شادی ہال گرانے پر حکم امتناع جاری کرنے سے انکار کردیا۔جسٹس حسن اظہر رضوی نے کہا پہلے ثابت کرنا ہوگا شادی ہال قانونی یانہیں، جس پر مالک شادی ہال کاکہنا تھا کہ شادی ہال کی قانونی دستاویز موجود ہیں۔عدالت نے استفسار کیا کہاں ہیں دستاویز، کس کے دستخط ہیں،اسے بھی طلب کر لیتے ہیں، بتائیں،مختیار کار ملیر نے دستاویزتیار کیں یا ڈپٹی کمشنر نے، جس پر مالک شادی ہال نے بتایا کہ قانونی دستاویزاسسٹنٹ کمشنر نے جاری کیں تو عدالت نے مزید کہا کہ یہ بتائیں کس قانون کے تحت اسسٹنٹ کمشنر دستاویزپردستخط کرسکتا ہے۔عدالت نے سینئر ممبر بورڈ آف ریونیو اور ڈی جی ایس بی سی اے، ڈپٹی کمشنر ملیر، مختیار کار ملیر، ایڈووکیٹ جنرل سندھ کو نوٹس جاری کردیے اور درخواست گزار سے درخواست قابل سماعت ہونے پر دلائل طلب کرلیے ہیں۔

ہائیکورٹ انکار

مزید :

صفحہ آخر -رائے -