الرحمہ انسٹیٹیوٹ کے طلبہ ملک کا اثاثہ ثابت ہوں گے،مختار سلفی

    الرحمہ انسٹیٹیوٹ کے طلبہ ملک کا اثاثہ ثابت ہوں گے،مختار سلفی

  

لاہور(پ ر)دینی دنیوی تعلیم کے ادارہ الرحمہ انسٹی ٹیوٹ کے سالانہ امتحانات شروع ہوگئے،آخری پیپر19مارچ کوہوگا۔الرحمہ انسٹیٹیوٹ کے طلبہ بورڈ کے امتحانات میں بھی نمایاں پوزیشن حاصل کرکے سکالرشپ لے رہے ہیں۔الرحمہ کے لائق اور ذہین طلبہ ملک وقوم کااثاثہ ثا بت ہوں گے ان خیالات کااظہارالرحمہ انسٹیٹیو ٹ کے مدیرامتحانات شیخ مختاراحمدسلفی نے کیا۔انہوں نے کہاکہ الرحمہ انسٹیٹیو ٹ دینی اوردنیوی تعلیم کااعلیٰ معیاری تعلیمی ادارہ ہے۔اس ادارے کے طلبہ تعلیم،تقریر،تحریر،حسن قرات اور کھیل کے مقابلوں میں پوزیشنیں اورانعامات حاصل کررہے ہیں۔ شاندار کامیابیوں،بیشمار انعامات اور اعزازت حاصل کرنے کی بنیادی وجہ دارالسلام ایجوکیشنل سسٹم کے چئیرمین عبدالمالک مجاہد اورمدیر ادارہ حافظ عبدالعظیم اسد کی ادارے کے ساتھ محبت اوراساتذہ کی محنت ہے۔یہی وجہ کہ ادارے کے دو طلبہ حافظ ابوبکر اور حافظ مطیع الرحمن مکی گذشتہ سال نمایاں تعلیمی کارکردگی کی بنیادپر وزیراعظم عمران خان سے شیلڈز وصول کرچکے ہیں۔

جبکہ 70 سے زائد طلبہ پنجاب گورنمنٹ سے سکالر شپ اورسولرانرجی سسٹم حاصل کرچکے ہیں اسی طرح اس ادارے کے طلبہ گذشتہ چھ سالوں میں آل پاکستان 15پوزیشنیں حاصل کرکے ادارے کانام روشن کرچکے ہیں۔انہوں نے کہا کہ کم وقت میں یہ کامیابی اور عزت ہمارے اعلیٰ تعلیمی اورامتحانی نظام کی بدولت ہی ممکن ہوسکی ہے۔ہمیں امید ہے کہ الرحمہ انسٹی ٹیوٹ کے لائق اورذہین طلبہ قوم کااثاثہ ثابت ہوں گے مستقبل میں ملک اورقوم کی تعمیر وترقی میں بھی اہم کردار ادا کریں گے۔

مزید :

میٹروپولیٹن 4 -