جرائم پیشہ افراد کیخلاف پولیس کاروائیوں کی رپورٹ طلب

جرائم پیشہ افراد کیخلاف پولیس کاروائیوں کی رپورٹ طلب

  

لاہور(کرائم رپورٹر) انسپکٹر جنرل پولیس پنجاب شعیب دستگیرنے صوبے کے تمام آر پی اوز اور ڈی پی اوز سے جرائم پیشہ وسماج دشمن عناصر کے خلاف پولیس ٹیموں کی کاروائیوں کی رپورٹس طلب کرنے کے ساتھ ساتھ انٹیلی جنس بیسڈ آپریشنز میں مزید تیزی لانے کی ہدایت کی ہے تاکہ شہریوں کی جان وما ل کے تحفظ اور پبلک سروس ڈلیوری کا عمل بہتر سے بہتر ہوسکے،

اسی سلسلے میں راناشعیب محمود ڈسٹرکٹ پولیس آفیسر خوشاب کی سربراہی میں گزشتہ ایک ماہ کے دوران پولیس ٹیموں نے جرائم پیشہ عناصر کیخلاف گھیرا تنگ کرتے ہوئے اہم کامیابیاں حاصل کیں،تفصیلات کے مطابق خوشاب پولیس کی جانب سے مطلوب اشتہاری ملزمان کی گرفتار ی میں شروع کی گئی مہم کے دوران پولیس ٹیموں نے اعلیٰ کارکردگی کا مظاہرہ کرتے ہوئے قتل، ڈکیتی اوررابری سمیت سنگین وارداتوں میں ملوث خطرناک 56مجرمان اشتہاری گرفتارکئے جن میں 05اے کیٹگری کے جبکہ51بی کیٹگری کے شامل ہیں۔ اس کے علاوہ جرائم پیشہ افراد کے خلاف آپریشن کر تے ہوئے41ملزمان کو گرفتارکیا گیا۔

کر کے ان کے قبضہ سے بھاری اسلحہ ناجائز برآمدکیا جن میں 11بندوق، 02رائفل، 25پسٹل، 03 ریوالور اور126گولیاں برآمد کیں۔سماج دشمن عناصر کے خلاف کاروائی کرتے ہوئے 28مقدمات درج کئے گئے جن میں ملوث ملزمان کو گرفتار کر کے ان کے قبضہ سے 14.518کلو چرس، 193لیٹر شراب، چالو بھٹیاں اور شراب کشید کرنے والا سامان برآمد کیا گیا۔نیشنل ایکشن پلان پر عمل درآمد کرتے ہوئے 21مقدمات درج کئے گئے جن میں 08مقدمات لاؤڈ سپیکر ایکٹ کی خلاف ورزی پر اور 13کرایہ داری ایکٹ کی خلاف ورزی پر درج کیے گئے۔اس کے علاوہ ضلع خوشاب کے مختلف تھانہ جات میں، تیز رفتار ی کے 16،بجلی چوری کے07،پرائس کنٹرول کے07مقدمات درج ہوئے۔ گیمبلنگ ایکٹ کے 05 مقدمات درج ہوئے جس میں 04 موٹرسائیکل اور رقم مبلغ - /12620 روپے کی برآمدگی ہوئی۔ اس عرصہ کے دوران ضلع خوشاب میں 02گینگ ہائے گرفتار کر کے 15لاکھ 10ہزار سے زائدمالیت کی برآمدگی کی گئی۔ علاوہ ازیں ضلع بھر میں امن و امان کے قیام اورجرائم پیشہ عناصر کی بیخ کنی کیلئے سرچ آپریشنزاور سنیپ چیکنگ کا عمل بھی جاری ہے۔ آئی جی پنجاب نے تاکیدکی ہے کہ صوبے کے تمام اضلاع میں حساس تنصیبات، مذہبی مقامات، تعلیمی ادارو ں اور عوامی مقامات کے سیکیورٹی پلان کا از سر نو جائزہ لیا جائے اور سیکیورٹی ڈیوٹی پر مامور اہلکاروں کو ڈیوٹی کی حساسیت اور درپیش چیلنجز کے متعلق بھرپور بریفنگ بھی دی جائے تاکہ وہ اپنے فرائض بطریق احسن ادا کرسکیں۔

مزید :

علاقائی -