کرچی،ایس بی سی اے نے رائل پارک کااین او سی منسوخ کردیا

کرچی،ایس بی سی اے نے رائل پارک کااین او سی منسوخ کردیا

  

کراچی (اسٹاف رپورٹر) سندھ بلڈنگ کنٹرول اتھارٹی کے ڈائریکٹرجنرل ڈاکٹرنسیم الغنی سہتوکی تمام ڈائریکٹرکو واضح ہدایات،سپریم کورٹ آف پاکستان کے غیرقانونی تعمیرات کے خاتمے سے متعلق احکامات کی تیزرفتاری سے تعمیل کی جائے،ویجیلنس کو سخت کیاجائے،غیرقانونی تعمیرات اورانہدامی عمل میں غفلت یاسرپرستی میں ملوث افراد کسی رعایت کے مستحق نہیں ہیں۔ ایس بی سی اے نے پروجیکٹ "رائل پارک "واقع گلشن اقبال ٹاؤن، کے این اوسی برائے تشہیروفروخت کو منسوخ کرتے ہوئے عوام الناس کو سرمایہ کاری سے متعلق متنبہ کیاہے جبکہ ڈائریکٹرجنرل کی ہدایات پر ڈیمالیشن اسکواڈ نے شہر کے مختلف علاقوں میں،کمرشل اوراضافی منزلوں سمیت دیگر غیرقانونی تعمیرات کے خلاف کارروائی کرتے ہوئے انہیں منہدم وسربمہر کردیاگیا۔تفصیلات کے مطابق ڈائریکٹرجنرل ایس بی سی اے نسیم الغنی سہتونے تمام ڈائریکٹرآف بلڈنگ کو ہدایات دی ہے کہ معززسپریم کورٹ کے احکامات پرسوفیصدتعمیل کو یقینی بنایاجائے مزید غیرقانونی تعمیرات اورانہدامی عمل میں بددیانتی وغفلت کے مرتکب کوملازمت سے برطرفی سمیت دیگرسخت تادیبی ایکشن کاسامناکرناپڑے گا،کسی رعایت کی گنجائش نہیں ہوگی میں خود بھی متعلقہ ٹاؤنز ڈائریکٹرز کے ہمراہ ویجیلنس کروں گااورموقع پر ہی احکامات جاری کروں گا۔علاوہ ازیں ایس بی سی اے نے پرائیویٹ پبلک سیل پروجیکٹ "رائل پارک '' (ROYAL PARK)،واقع پلاٹ نمبر "A''،سروے نمبر333،(2 ایکڑ) NC-210،دیہہ اوکیواری،اسکیم 24،گلشن اقبال ٹاؤن کراچی،کی این اوسی برائے تشہیروفروخت کومنسوخ کردیاہے اوراس سلسلے میں عوام الناس کو متنبہ کیاہے کہ مذکورہ پروجیکٹ میں کسی بھی قسم کی لین دین نہ کی جائے،بصورت دیگر اپنے نقصان کے وہ خود ذمہ دارہوں گے۔واضح رہے کہ مذکورہ پروجیکٹ کو معززسپریم کورٹ آف پاکستان نے مورخہ 6&7،فروری کواپنے ایک حکم (CP NO.9/2010) کوغیرقانونی قراردیتے ہوئے ایس بی سی اے کواسے مکمل منہدم کرنے کے احکامات دیئے ہیں اس حوالے سے ایس بی سی اے کی جانب سے حکم کی تعمیل میں قبل ازیں مذکورہ پروجیکٹ کے بلڈنگ پلان کوبھی منسوخ کیاجاچکاہے جبکہ انہدامی کارروائی کے سلسلے میں متعلقہ سیکشن کوہدایات جاری کردی گئی ہیں۔دریں اثناء لیاقت آباد ٹاؤن کے علاقے گلبہار میں زمین بوس ہونے والی عمارت کے ملبے کوہٹادیاگیاجبکہ غیرقانونی تعمیرات کے خلاف ڈیمالیشن اسکواڈ کی مہم کے دوران جمشید ٹاؤن میں پلاٹ نمبر A-349، اورپلاٹ نمبر A-349/1،بلاک 8،پرپہلی اور دوسری منزل کی پارٹیشن دیواروں اور پہلی منزل سامنے کی جانب آرسی سی چھت کومنہدم اورپلاٹ نمبر 159-R،بلاک 3،پی ای سی ایچ ایس کی بیسمنٹ پر تمام آہنی جنگلے گیس کٹرکی مددسے ہٹادیئے گئے جبکہ پلاٹ نمبر10،بلاک 3،ماڈرن پی ای سی ایچ ایس کے گراؤنڈفلورپر غیرقانونی دکانوں کوسربمہرکردیاگیا۔لیاری ٹاؤن میں پلاٹ نمبر 1467اور1167،بلاک E،بغدادی پر چھٹی منزل کی دیواروں اور آرسی سی چھت اورمعززعدالت کے حکم کی تعمیل میں پلاٹ نمبر 1568،کھڈا (AKI-16S-20)،چھٹی منزل کی پارٹیشن دیواروں کو منہدم کردیاگیا۔مزید براں ڈیمالیشن اسکواڈ کی ٹیم نے نارتھ ناظم آباد ٹاؤن میں پلاٹ نمبر B-258،بلاک L،کی لازمی کھلی جگہ پر پارٹیشن دیواروں کومنہدم اورپلاٹ نمبر B-283،بلاک L،پر غیرقانونی نجی اسکول کو سربمہرکردیا جبکہ ایک اورڈیمالیشن ٹیم نے اورنگی ٹاؤن سیکٹرساڑھے گیارہ میں واقع غیرقانونی شادی لان،فلک لان کی سامنے کی جانب کی تعمیرات کوبھاری مشینری کی مددسے منہدم کردیاتاہم لان کے مالک کے ہمراہ وہاں موجود مجمع نے قانون کو ہاتھ میں لیتے ہوئے امن ومان کی صورتحال کونقصان پہنچایاجس کے سبب مزید انہدامی کارروائی کو موخرکردیاگیا۔

مزید :

صفحہ اول -