لاہورہائیکورٹ،مریم نواز کی ای سی ایل سے نام نکالنے اور پاسپورٹ واپسی کی درخواستوں کو نوازشریف کی درخواستوں کےساتھ سماعت کرنے یا نہ کرنے کے نکتے پر فیصلہ محفوظ

لاہورہائیکورٹ،مریم نواز کی ای سی ایل سے نام نکالنے اور پاسپورٹ واپسی کی ...
لاہورہائیکورٹ،مریم نواز کی ای سی ایل سے نام نکالنے اور پاسپورٹ واپسی کی درخواستوں کو نوازشریف کی درخواستوں کےساتھ سماعت کرنے یا نہ کرنے کے نکتے پر فیصلہ محفوظ

  

لاہور(ڈیلی پاکستان آن لائن)لاہورہائیکورٹ نے مریم نواز کی ای سی ایل سے نکام نکالنے اور پاسپورٹ کی واپسی کی درخواستوں کو نوازشریف کی درخواستوں کیساتھ سماعت کرنے یا نہ کرنے کے نکتے پر فیصلہ محفوظ کرلیا اور سماعت ملتوی کردی۔

میڈیا رپورٹس کے مطابق لاہور ہائیکورٹ میں مریم نواز کی ای سی ایل سے نکالنے اور پاسپورٹ واپسی کی درخواست پر سماعت ہوئی،جسٹس علی باقر نجفی کی سربراہی میں بنچ نے سماعت کی،ایڈیشنل اٹارنی جنرل نے کہا کہ اٹارنی جنرل سپریم کورٹ میں مصروف ہیں اس لیے آج پیش نہیں ہو سکے ،عدالت نے کہاکہ آپ کو کہا تھا کہ اٹارنی جنرل سے پوچھ کہ بتائیں کہ وہ کب آئیں گے ،عدالت نے استفسار کیا کہ کیا ہم یہ سمجھیں کہ اٹارنی جنرل اس کیس میں پیش نہیں ہونا چاہتے؟۔

عدالت نے کہا کہ حکومت نواز شریف کو واپس لانے کے لیے شاید کچھ اقدامات کر رہی ہے ،عدالت نے مریم نواز کے وکیل سے استفسار کیا کہ پھر بھی آپ اس درخواست کو چلانا چاہتے ہیں۔

وکیل وفاق نے کہا کہ نوازشریف کی واپسی کےلئے حکومت اقدامات کررہی ہے،پھر مریم نواز کو باہر جانے کی کیاضرورت؟ ،وکیل مریم نواز نے کہاکہ یہ تو حکومت کا بیان ہے نا ، مریم نواز کوباہر جانے کی اجازت دی جائے ،لاہور ہائیکورٹ نے کہا تھا کہ جب ڈاکٹرز کہیں کہ نواز شریف ٹھیک ہیں تو وہ واپس آ جائیں ،

جسٹس علی باقر نجفی نے کہا کہ یاتواس کیس کونوازشریف کے کیس کےساتھ سناجائے یاعلیحدہ سنا جائے؟کسی مجرم کے آرٹیکل 15 کے تحت کیا حقوق ہیں؟ کیا اس آرٹیکل کو معطل کیاجاسکتا ہے؟جسٹس علی باقر نجفی نے کہا کہ سزا یافتہ ہونے کے بعد کسی مجرم کے کون کون سے حقوق معطل ہو جاتے ہیں؟ ،ہمیں بین الاقوامی قوانین سے متعلق بھی معاونت درکار ہو گی۔

جسٹس علی باقر نجفی نے کہا کہ اٹارنی جنرل سے نہیں پوچھیں گے کہ وہ آ رہے ہیں یا نہیں، اب ہم آرڈر کریں گے،ایڈیشنل اٹارنی جنرل نے کہاکہ نواز شریف اور مریم نواز کا کیس اکٹھا سنا جائے، اعظم نذیر تارڑ نے استدعا کی کہ مریم نواز اور نواز شریف کا کیس علیحدہ علیحدہ سنا جائے ،مجرم کے بیرون ملک جانے کی اجازت دینے کا فیصلہ عدالت نے کرنا ہے،عدالت نے کہا کہ مریم نواز اور نواز شریف کا کیس اکٹھا سننے سے متعلق مناسب حکم جاری کریں گے،عدالت نے نوازشریف کی درخواستوں کے ساتھ سماعت کرنے یا نہ کرنے کے نکتے پر فیصلہ محفوظ کرلیااورسماعت ملتوی کردی۔

مزید :

قومی -علاقائی -پنجاب -لاہور -